Tuesday, May 17, 2022  | 1443  شوّال  15

سازش کا ’نیوٹرل‘ کوبھی بتایالیکن کچھ نہ کیاگیا، عمران خان

SAMAA | - Posted: May 13, 2022 | Last Updated: 4 days ago
SAMAA |
Posted: May 13, 2022 | Last Updated: 4 days ago

سابق وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ شوکت ترین کو ان کے پاس بھیجا جو خود کو ’نیوٹرل‘ کہتے ہیں، پیغام دیا کہ سازش کامیاب ہوئی تو معیشت تباہ ہوگی، لیکن کچھ نہ کیا گیا۔

مردان میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم اور چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ میں اسلام آباد اس لئے بلارہا ہوں کہ آپ کو پاکستان کو حقیقی آزادی دینے کی جدوجہد میں شرکت کرنا ہوگی، خاص طور پر نوجوانوں کو بلانے آیا ہوں، جو بھی مجھ سے کم عمر ہے وہ نوجوان ہے، جو بھی 70 سال کی عمر سے کم ہے وہ نوجوان ہے۔

انہوں نے کہا کہ میں صرف آپ کو دعوت دینے نہیں آیا بلکہ پاکستان کی بچیوں، بہنوں اور ماؤں کو بھی دعوت دینے آیا ہوں، میرے والدین کہتے تھے کہ تحریک پاکستان میں عورتیں، مرد، بزرگ اور بچے بھی شامل تھے، حقیقی آزادی کیلئے ایک بار پھر نکلنا پڑیگا۔

پی ٹی آئی چیئرمین نے کہا کہ چوروں کے ٹولے اور لندن میں بیٹھے مفرور، بزدل اور ڈٓاکو بھی سن لے، تم نے اس ملک کے فیصلے نہیں کرنے، کون ملک کی قیادت کرے گا اس کا فیصلہ قوم اور عوام کرے گی، پاکستان پر یہ فیصلہ کن وقت ہے، امریکا کے پٹھو، غلاموں اور ڈاکوؤں (آصف زرداری، نواز شریف، فضل الرحمان) کے ٹولے سے ملک کو آزاد کرنا ہے، ڈیزل نے وہ وزارت پکڑی جس میں سب سے زیادہ پیسہ بنے گا۔

سابق وزیراعظم کا کہنا ہے کہ اليکشن کی تاريخ نہ دی تو سمندر اسلام آباد آرہا ہے سب کو بہالے جائیگا، سازش کے ذریعے ملک کی توہين کی گئی، ہماری قوم کو ذليل کيا گيا، ڈونلڈ لو سفير کو کہتا ہے عمران خان کو نہ ہٹايا تو امريکا نقصان پہنچائے گا، کہا عدم اعتماد کامياب کرکے شہباز شريف کو بٹھايا تو معاف کرديا جائیگا، ميں ان سے پوچھتا ہوں تم کون ہو پاکستان کو معاف کرنے والے؟۔

انہوں نے مزید کہا کہ شہباز شريف، آصف زرداری، نواز شريف اور فضل الرحمان امريکا کے غلام ہيں، نواز شريف سے زيادہ بزدل آدمی زندگی ميں نہيں ديکھا، فضل الرحمان کو مولانا نہيں کہہ سکتا يہ ڈيزل کے پرمٹ پر بکتا ہے، کس نے سازش کروائی مجھے ہر آدمی کی شکل یاد ہے، میر جعفر اور میر صادق نے ملک کر ہماری حکومت گرائی۔

عمران خان کا کہنا ہے کہ کوئی جنرل بڑا جنرل نہيں بن سکتا جب تک موت کا ڈر ختم نہيں کرتا، جو سازش روک سکتے تھے ان کو بتايا سازش کامياب ہوئی تو معيشت نيچے جائے گی، شوکت ترين کو کہا ان کو بتاؤ جو اپنے آپ کو ’نيوٹرل‘ کہتے ہيں، افسوس سے کہنا پڑتا ہے سازش کو نہيں روکا گيا، چور اوپر آگئے اداروں میں بيٹھ گئے، اب ادارے تباہ ہوں گے۔

پی ٹی آئی چیئرمین نے چيف جسٹس آف پاکستان سے مطالبہ کیا کہ کميشن بنائيں اور پوچھيں کس نے ملک کيساتھ غداری کی، موجودہ چيف اليکشن کمشنر کے ہوتے ہوئے شفاف انتخابات نہيں ہوسکتے، اليکشن کميشن ساری قوم آپ کی طرف ديکھ رہی ہے، اگر لوٹوں کو بچايا تو قوم آپ کی طرف آئے گی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube