Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  15

کراچی میں ڈاکوؤں نے جج کو لوٹ لیا

SAMAA | - Posted: Dec 2, 2021 | Last Updated: 6 months ago
Posted: Dec 2, 2021 | Last Updated: 6 months ago
[caption id="attachment_2450933" align="alignnone" width="846"] فائل فوٹو[/caption]

کراچی مین ایکسپریس ہائی وے پر ڈاکوؤں نے لوٹ مار کے دوران جج کو قیمتی موبائل فون سے محروم کردیا۔

واقعہ بروز بدھ یکم دسمبر کو مین ایکسپریس وے روڈ پر پیش آیا، جہاں مسلح افراد نے لوٹ مار کی۔ ڈسٹرکٹ سجاول کے اے ڈی جے نوید حسین کولاچی اپنے بیٹے اور 2 ڈرائیوروں کے ہمراہ ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی (ڈی ایچ اے) سے شارع فیصل جا رہے تھے۔

جج کے بیٹے محمد علی کی مدعیت میں درج ایف آئی آر کے مطابق اے ڈی جے نوید حسین کولاچی بیٹے محمد علی کولاچی اور دو ڈرائیوروں کے ہمراہ گاڑی میں مین ایکسپریس وے روڈ استعمال کرتے ہوئے شارع فیصل کی طرف جارہے تھے کہ بائیکو پیٹرول پمپ کے قریب ان کی گاڑی ٹریفک جام میں پھنس گئی۔

محمد علی کولاچی کے مطابق ٹریفک جام کے دوران مسلح ملزمان نے رکی ہوئی گاڑیوں میں لوٹ مار شروع کی۔ اس دوران ملزمان لوگوں سے موبائل فون اور نقدی لوٹتے رہے۔

بعد ازاں ملزمان ان کی گاڑی کی جانب آئے اور میرے والد اور گاڑی کے سامنے کھڑے ہو کر ڈرائیور پر بندوقیں تان لی اور ہم سے موبائل فونز مانگے۔ جس پر ہم چاروں نے اپنے فونز نکال کر ملزمان کو دے دیئے۔ چھینے گئے موبائل فونز ریڈ می، پوکو، سام سنگ اور نوکیا تھے، جن کی مالیت 2 لاکھ روپے سے زیادہ بنتی ہے۔

ملزمان کے فرار ہونے کے بعد ہم نے قریب کھڑی پولیس موبائل کو واردات سے آگاہ کیا اور ان کے ہمراہ تھانے آکر وقوعے کی رپورٹ درج کرائی۔ پولیس نے واقعہ کا مقدمہ درج کرکے تحقیقات شروع کردی۔

بلوچ کالونی پولیس نے نامعلوم مسلح افراد کے خلاف ایف آئی آر نمبر: 452/21 دفعہ 397 (ڈکیتی یا ڈکیتی کے ساتھ موت یا شدید چوٹ پہنچانے کی کوشش) 34 (مشترکہ ارادہ) کے تحت درج کی ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube