Tuesday, May 17, 2022  | 1443  شوّال  15

کمشنرکراچی کا نسلہ ٹاور کادورہ، عدالتی احکامات پرعملدرآمد کا جائزہ

SAMAA | - Posted: Oct 8, 2021 | Last Updated: 7 months ago
SAMAA |
Posted: Oct 8, 2021 | Last Updated: 7 months ago

کمشنر کراچی اقبال میمن نے نسلہ ٹاور، الہ دین پارک، کڈنی ہل پارک سمیت شہر کے مختلف علاقوں کا دورہ کیا، تجاوزات اور غیر قانونی تعمیرات کیخلاف سپریم کورٹ کے احکامات پر عملدرآمد کا جائزہ لیا۔

کمشنر کراچی محمد اقبال میمن شہری مسائل سے آگاہی اور ان کے حل کے اقداما ت کیلئے کراچی کے تمام اضلاع کے دورے کے پروگرام کے دوسرے روز ضلع شرقی پہنچے۔

انہوں نے ضلع شرقی میں شہری سہولتوں بالخصوص غیر قانونی تعمیرات کیخلاف سپریم کورٹ کے احکامات پر عملدرآمد کے سلسلے میں انتظامیہ کی کوششوں اور اقدامات کا جائزہ لیا۔

کمشنر کراچی نے نسلہ ٹاور کا بھی معائنہ کیا، وہ کڈنی ہل اور الہ دین پارک بھی گئے۔

ڈپٹی کمشنر شرقی آصف جان صدیقی نے کمشنر کراچی کو الہ دین پارک پر غیر قانونی تعمیرات منہدم کرنے کے بعد مجوزہ پارک کی تعمیر کے منصوبے کے بارے میں سائٹ پر بریفنگ دی۔

شہری سہولتوں کے جائزے کے سلسلے میں کمشنر کراچی نے شاہراہ قائدین، گلشن اقبال اور گلستان جوہر کے مختلف علاقوں کا تفصیلی دورہ کیا، جس کے بعد وہ جناح پارک اور نشتر پارک بھی گئے۔

جناح پارک کے دورہ کے موقع پر اقبال میمن نے پارک میں جگہ جگہ کچرے کے ڈھیر کا نوٹس لیا، انہوں نے ڈی سی کو ہدایت کی کہ پارک میں کچرا پھینکنے والوں کو تنبیہہ کریں، یقینی بنائیں کہ پارک میں کچرا پھینکنے والوں کو روکا جائے اور موجود کچرے کو جام چاکرو لینڈ فل سائٹ پر منتقل کیا جائے۔

انہوں نے ضلع کی مختلف شاہراہوں پر ٹریفک کی روانی کا نوٹس لیا، ڈپٹی کمشنر کو ہدایت کی کہ وہ ٹریفک پولیس کے تعاون سے ٹریفک دباؤ کم کرنے کے اقدامات کریں، ٹریفک روانی کو متاثر کرنیوالی تمام تجاوزات ختم کی جائیں، کراچی میں ٹریفک کے بڑھتے ہوے دباؤ کو کم کرنے کیلئے شاہراہوں اور سروس روڈ پر تجاوزات ہٹانے کی ضرورت ہے۔

نشتر پارک میں لائبریری کے دورے کے موقع پر کمشنر کو لائبریرین نے کتابوں کے بارے میں تفصیلات سے آگاہ کیا۔ اقبال میمن نے ڈپٹی کمشنر کو ہدایت کی کہ وہ لائبریری کو بہتر بنانے میں اپنا مثبت کردار ادا کریں اور لائبریری کو بہتر بنانے میں ان کی ہر ممکنہ مدد کریں۔

کمشنر نے کہا کہ کتابوں تک رسائی سے معاثرے میں مطالعہ کے رحجان کو فروغ ملے گا، انٹرنیٹ کے دور کے باوجود کتابوں کی آج بھی بہت اہمیت ہے، اس سے معاشرے میں مثبت سرگرمیوں کو فروغ دینے کی حکومت کی کوششوں میں مدد ملے گی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
Facebook Twitter Youtube