Saturday, January 29, 2022  | 25 Jamadilakhir, 1443

نظام میں خرابی کی نشاندہی کرنا غداری نہیں، جاوید لطیف

SAMAA | - Posted: Jun 2, 2021 | Last Updated: 8 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 2, 2021 | Last Updated: 8 months ago

پاکستان مسلم ليگ نون کے رہنما جاوید لطیف کے جوڈیشل ریمانڈ میں 9 جون تک توسیع کردی گئی ہے۔

بدھ کو لیگی رہنما جاوید لطیف کو لاہور میں ماڈل ٹاؤن کچہری پیش کیا گیا۔ اس موقع پر سخت سیکورٹی انتظامات تھے۔

جاوید لطیف مجسٹریٹ کے روبرو پیش ہوئے تو جج نے چالان پیش کرنے کے حوالے سے استفسارکیا۔ جیل حکام نے بتایا کہ یہ سوال تفتیش سے متعلق ہے، انہوں نے صرف ملزم کو جیل سے پیش کیا ہے۔

مجسٹریٹ نے جاوید لطیف سے پوچھا کہ وہ کچھ کہنا چاہتے ہیں تو جاوید لطیف نے جواب دیا کہ غداری کی فیکٹری بند ہونی چاہیے اورخرابی کی نشاندہی کرنا غداری نہیں ہے۔

جاوید لطیف نے مزید کہا کہ ملک میں جو سیاسی عدم استحکام آیا ہوا ہے وہ  پارلیمنٹ کےاندر تبدیلی سے حل نہیں ہوگا اور نئے انتخابات پاکستان کے مسائل کا حل ہے۔جاوید لطیف کو جوڈیشل ریمانڈ ختم ہونے پر دوبارہ 9 جون کو پیش کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ جاوید لطیف نے سما ٹی وی کو دیئے گئے خصوصی انٹرویو میں کہا تھا کہ اگر مریم نواز کو کچھ ہوا تو وہ پیپلز پارٹی کی طرح پاکستان کھپے کا نعرہ نہیں لگائیں گے بلکہ اس میں ملوث ذمہ داروں کو قوم کٹہرے میں لائے گی۔ بہت بڑا حادثہ ہوجائے گا، ملک پر رحم کیا جائے اور مشرقی پاکستان جیسی کہانی کو دوبارہ نہ دہرایا جائے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube