Thursday, May 19, 2022  | 1443  شوّال  17

علی زیدی جےآئی ٹیزکومتنازعہ بناکرملزمان کوفائدہ پہنچاناچاہتےہیں،مرادعلی شاہ

SAMAA | - Posted: Jul 8, 2020 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Jul 8, 2020 | Last Updated: 2 years ago

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ وفاقی وزیرعلی زیدی کی باتوں پریقین کرنامشکل نظرآتاہے، عزیربلوچ کی جےآئی ٹی سامنےآنےسےسب خبردارہوگئے، علی زیدی رپورٹ کومتنازعہ بناکرملزمان کوفائدہ پہنچاناچاہتےہیں۔

بدھ کونیب راولپنڈی ميں پيشی کے بعد وزيراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ نےگفتگو کرتےہوئے تین جےآئی ٹیز سے متعلق بتایا کہ  7دستخط والی جے آئی ٹی رپورٹ محکمہ داخلہ ميں موجود ہے،علی زيدی نے غلط بيانی سے کام ليا،علی زيدی کو کچھ معلوم نہيں ہے۔

وزيراعلیٰ سندھ نےسوال کیا کہ دروازے پرکوئی بھی کچھ بھی دیدے تواسے ايوان ميں پيش کياجانا چاہئے؟۔ انھوں نے یہ بھی بتایا کہ جےآئی ٹی 35يا36صفحات پر مشتمل ہے،علی زيدی کی غير ذمہ داری کی انکوائری کافيصلہ حکومت کرے،جےآئی ٹی کی رپورٹ کو صحیفہ مانا جاتا ہے۔

وزیراعلی سندھ مرادعلی شاہ نے بتایا کہ پچھلے ماہ کی 9 تاریخ کو نیب کا سوال نامہ ملا اور 18 جون کو طلب کیا گیا۔

انھوں نے بتایا کہ نیب سے درخواست کی کہ پیشی کو موخرکردیں جس پر نیب نے گزارش مان لی اور 8 جولائی کو طلب کیا۔ مراد علی شاہ نے بتایا کہ نیب کی جانب سے پوچھے گئے 19 سوالوں کے جواب دے دیئے۔

مرادعلی شاہ نےبتایا کہ قوائد وضوابط کے تحت سندھ روشن پروگرام منصوبے کےفنڈز مختص کيے، سندھ روشن پروگرام منصوبے میں کوئی غلط کام نہیں کیا۔

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ اس منصوبے کی منظوری کیلئےاختیارات کاغلط استعمال نہیں کیا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube