Thursday, May 19, 2022  | 1443  شوّال  17

لوڈشیڈنگ: کے الیکٹرک گورنر سے وعدہ بھی پورا نہ کرسکی

SAMAA | - Posted: Jun 27, 2020 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Jun 27, 2020 | Last Updated: 2 years ago

کے اليکٹرک کے سی ای او نے گورنر سندھ عمران اسماعیل کو 24 گھنٹوں ميں لوڈشيڈنگ ميں کمی کی يقين دہانی کرائی تاہم ادارہ اپنا یہ وعدہ بھی پورا نہ کرسکا، بجلی کی طویل بندش سے عدالتيں اور صنعتيں بھی متاثر ہوگئیں۔

گورنر ہاؤس کراچی ميں عمران اسماعيل سے کے اليکٹرک کے سی ای او مونس عبداللہ علوی نے گزشتہ روز ملاقات کی تھی، جس ميں چیف ایگزیکٹو آفیسر کے الیکٹرک نے 24 گھنٹوں ميں لوڈشيڈنگ میں کمی کی یقین دہانی کرائی تھی، مگر یہ وعدہ بھی وفا نہ کرسکے۔

کراچی کے رہائشی علاقوں ميں عوام تاحال لوڈشيڈنگ کا عذاب جھیل رہے ہیں، سٹی کورٹ کو بھی لوڈ شیڈنگ سے نہ بچ سکی، سائلين اور عملہ سٹی کورٹ کی راہ داری ميں گھومتا رہا۔

ادھر صنعتکار بھی بدترين لوڈشيڈنگ پر بپھر گئے۔ ان کا کہنا ہے کہ انڈسٹریل زونز میں 8 گھنٹے کی طویل لوڈشیڈنگ شروع کردی گئی، پہلے ہی لاک ڈاؤن کی وجہ سے معاشی سرگرمیاں 50 فیصد منجمد ہيں۔

کراچی کے گرمی بڑھتے ہی کے الیکٹرک نے مختلف علاقوں میں 3 سے 10 گھنٹے تک اعلانیہ اور غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ شروع کردی تھی، کبھی مینٹی ننس اور کبھی فرنس آئل و گیس کی قلت کا بہانہ بنایا گیا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube