Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  15

پاکستان نے گرفتار پائلٹ ابھی نندن کو بھارت کے حوالے کردیا

SAMAA | - Posted: Mar 1, 2019 | Last Updated: 3 years ago
SAMAA |
Posted: Mar 1, 2019 | Last Updated: 3 years ago

 

بھارتی پائلٹ ابھی نندن کو پاکستان نے بھارت کے حوالے کردیا ہے۔ بھارتی پائلٹ کو واہگہ بارڈر پر بی ایس ایف حکام نے وصول کیا۔

ابھی نندن کو سخت سیکورٹی میں واہگہ بارڈر لایا گیا۔ اس موقع پر اطراف کی سڑکیں بند کردی گئی تھیں۔ پاک فوج کے ساتھ رینجرز اور پولیس کے دستے راستے میں تعینات تھے۔ بھارتی سفارتخانے کے 4 اہلکار بھی واہگہ بارڈر پر موجود تھے جن میں جوائے تھامس کورینِ، اشوک کمارِ، ناریش کمار اور گورکھ شرما  شامل تھے۔

بھارتی پائلٹ کی رہائی کے موقع پر بھارت نے اپنی سرحد پر پرچم اتارنے کی تقریب منسوخ کردی جبکہ پاکستان کی جانب سے تقریب معمول کے مطابق جاری رہی۔

بھارتی پائلٹ کی رہائی کا اعلان وزیراعظم عمران خان نے گزشتہ روز پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں کیا تھا۔ وزیراعظم نے کہا تھا کہ امن کی خاطر بھارتی پائلٹ کو رہا کررہے ہیں۔ بھارتی پائلٹ کا طیارہ 2 روز قبل پاکستانی حدود کی خلاف ورزی پر پاک فضائیہ کے جوابی حملے میں مار گرایا گیا تھا۔

ابھی نندن کی رہائی کا اپوزیشن لیڈر شہبازشریف اور پیپلزپارٹی پارلیمنٹیرینز کے چئیرمین آصف علی زرداری نے بھی خیر مقدم کیا ہے۔ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پاک بھارت کشيدگي کم کرنے کے ليے بھارتي پائلٹ ابھی نندن کو رہا کررہے ہيں۔

یہ بھی پڑھیں: پائلٹ ابھی نندن کو واہگہ بارڈر پر بھارتی حکام کے حوالے کیا جائے گا،دفترخارجہ

اس سے قبل اسلام آباد ہائیکورٹ نے بھارتی پائلٹ کی رہائی کے خلاف دائر درخواست خارج کردی۔ چیف جسٹس اطہر من اللہ نے درخواست پر سماعت کی۔ درخواست گزار کے وکیل نے کہا کہ بھارتی پائلٹ پاکستان کے خلاف جارحیت کا ارتکاب کرتے ہوئے پکڑا گیا ہے۔ کلبھوشن یادیو بھی جارحیت کرتے ہوئے پکڑا گیا تھا۔

جسٹس اطہر من اللہ نے استفسار کیا کہ مجھے یہ بتائیں کہ پائلٹ کو واپس بھیجنے کا فیصلہ کون کرتا ہے؟ وزیر اعظم نے ایوان میں پائلٹ کی رہائی کا اعلان کیا۔ پارلیمنٹ میں تمام جماعتوں کے نمائندے موجود تھے۔ کسی نے بھی عمران خان کے اعلان پر اعتراض نہیں کیا۔ یہ ایک پالیسی کا معاملہ ہےاور ہمیں پارلیمنٹ کا احترام کرنا چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں: اسلام آباد ہائی کورٹ نے بھارتی پائلٹ کی حوالگی کے خلاف دائر درخواست خارج کردی

درخواست گزار کے وکیل نے اعتراض اٹھایا کہ وزیراعظم نے پارلیمنٹ کو اس معاملے پر اعتماد میں نہیں لیا۔ ابھی لائن آف کنٹرول پر جنگ جاری ہے۔ جنیوا کنونشن بھی کہتا ہے کہ تنازع ختم ہونے کے بعد  قیدی واپس کئے جائیں۔ وزیراعظم تقریر ختم کرکے بیٹھے اور پھر اٹھ کر اعلان کردیا۔ عوامی جذبات وزیراعظم کے اس فیصلے کے ساتھ نہیں ہیں۔

جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ کیا ہم منتخب نمائندگان کی حب الوطنی پر شک کر سکتے ہیں؟ جب تمام ارکانِ پارلیمنٹ ایک بات پر متفق ہوتے ہیں تو کسی بحث کی ضرورت نہیں ہوتی۔ سپریم کورٹ نے 2014 کے فیصلے میں کہا تھا کہ خارجہ پالیسی کے معاملات میں عدالتوں کو مداخلت نہیں کرنی چائیے۔

یہ بھی پڑھیں: بھارتی پائلٹ کی رہائی کا فیصلہ کشیدہ صورتحال میں بہتری کی جانب اہم قدم ہے،اقوام متحدہ

واضح رہے کہ عالمی برادری کی جانب سے بھی بھارتی پائلٹ ابھی نندن کی رہائی کا خیر مقدم کیا گیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کے نام اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوٹیریز نے اپنے پیغام میں ان کے فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے کہا ہے کہ وزیراعظم کا فیصلہ کشیدہ صورتحال میں بہتری کی جانب اہم قدم ہے۔ پاکستان اور بھارت مذاکرات کے ذریعے تنازعات کا حل نکالیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube