Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  16

عدالت کا وینٹی لیٹرز منگوانے کیلئے محکمہ صحت پنجاب کو چار ماہ کا وقت

SAMAA | - Posted: Dec 26, 2018 | Last Updated: 3 years ago
SAMAA |
Posted: Dec 26, 2018 | Last Updated: 3 years ago

عدالت عطمیٰ نے پنجاب کے سرکاري اسپتالوں ميں وینٹی لیٹرز منگوانے کے لیے محکمہ صحت پنجاب کو چار ماہ کا وقت دے ديا۔


سپريم کورٹ لاہور رجسٹری ميں پنجاب کے سرکاري اسپتالوں ميں وينٹي ليٹرز کي کمي کے کيس کي سماعت ہوئي۔

وزير صحت ياسمين راشد نے پيش ہو کر موقف اپنايا کہ سابق وزير نے سمري پر دستخط نہيں کيے اور پیپرا رولز کے تحت وہ دستخط نہیں کر سکتیں اس لیے وينٹي ليٹرز کےلیے قوانين ميں نرمي کي سمري وزيراعلي کو بھيجي ہے۔

چيف جسٹس نے استفسار کيا کہ وزيراعلي کے پاس کتنی سمریاں زيرالتوا ہیں یہ بلا کر پوچھ ليتے ہيں، وینٹی لیٹرز کو مذاق سمجھا ہوا ہے۔

چيف جسٹس آف پاکستان کا کہنا تھا کہ نجي اسپتال آئی سی یو بیڈ کا 23 ہزار اور وینٹی لیڑر کا 5ہزار لیتے ہیں جبکہ يہ مفت فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے۔ بد قسمتی سے غريب کا وينٹي ليٹر اتار کر امیر کو لگا دیا جاتا ہے

ياسمين راشد نے دس روز ميں سمری منظور کرانے کي يقين دہاني کرائي۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube