Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  17

شہر سے بروقت آلائشیں اٹھائی گئیں، سعید غنی کا دعویٰ

SAMAA | - Posted: Aug 25, 2018 | Last Updated: 4 years ago
SAMAA |
Posted: Aug 25, 2018 | Last Updated: 4 years ago

وزیر بلدیات سندھ سعید غنی کہتے ہيں کراچی کے 33 فیصد تقریباً 10 لاکھ گھروں میں قربانی ہوئی، انہوں نے دعویٰ کیا کہ شہر میں بروقت آلائشیں اٹھائی گئيں، وہ مقامات دکھائيں جہاں آلائشيں پڑی ہيں، صفائی کے انتظامات میں تعاون پر میئر کراچی سمیت دیگر اداروں کا مشکور ہوں۔

عيد گزر گئی ليکن آلائشوں کو ٹھکانے نہ لگايا جاسکا، کراچی کے مختلف علاقوں میں آلائشوں اور گندگی کے ڈھیر اداروں کی کارکردگی پر سواليہ نشان بن گئے، حيدرآباد کی سڑکوں پر بھی گندگی موجود ہے۔

وزیر بلدیات سندھ سعید غنی نے مشیر قانون مرتضیٰ وہاب کے ہمراہ کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے تنقید کرنیوالوں کو بھرپور جواب دیا، بولے کہ لاہور میں 60 فیصد لوگوں نے قربانی کی، کرپشن کیلئے زیادہ آلائشیں دکھائی گئیں، پشاور میں 27 فیصد گھروں میں قربانی ہوئی جبکہ کراچی میں سب سے زیادہ قربانی ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ میڈیا میں کہا جارہا ہے 3 لاکھ جانوروں کی قربانی ہوئی، مجھے بتائیں یہ تعداد آپ کے پاس کہاں سے آئی؟، کراچی میں 30 لاکھ گھر ہیں، 33 فیصد تقریباً 10 لاکھ گھروں میں قربانی ہوئی، صرف سینٹرل میں 4 لاکھ سے زائد افراد جانور قربان کئے گئے۔

سعید غنی کا کہنا ہے کہ شہر میں ہونیوالے اچھے کام کو سراہنا چاہئے، مجھے وہ مقامات دکھائیں جہاں آلائشیں پڑی ہیں، کوتاہی کرنیوالوں کیخلاف ایکشن لیا جائے گا، تسلیم کرتے ہیں کراچی میں جگہ جگہ کچرے کے ڈھیر ہیں، صوبےمیں جلد ہفتہ صفائی منائیں گے، جسے خود مانیٹر کروں گا۔

وہ بولے کہ کچھ لوگ بیچ روڈ پر کچرا پھینکتے ہیں، کام کو بہتر سے بہتر بنانے کیلئے کوشش کرتے رہیں گے، کسی جگہ بے ضابطی ہوگی وہاں کارروائی کریں گے۔

پیپلزپارٹی کے سینئر رہنماء نے آلائشیں اٹھانے اور مدد کرنے پر میئر کراچی، سولڈ ویسٹ مینجمنٹ سمیت تمام اداروں کا شکریہ ادا کیا، کہتے ہیں کہ کراچی میں پہلے کے مقابلے میں انتظامات بہتر تھے، بروقت آلائشیں اٹھائی گئیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube