Tuesday, May 17, 2022  | 1443  شوّال  15

دلہن کے ہاتھوں سسرالیوں کی ہلاکتیں،تعداد15ہوگئی

SAMAA | - Posted: Oct 31, 2017 | Last Updated: 5 years ago
SAMAA |
Posted: Oct 31, 2017 | Last Updated: 5 years ago

مظفر گڑھ : مظفر گڑھ : راجن پور کي آسيہ نے زبردستي شادي کرانے کا بدلہ کیا ليا، جاں بحق افراد کی تعداد رکنے کا نام نہیں لے رہی۔ نشتراسپتال میں زیرعلاج سات سالہ بچی بھی دم توڑ گئی، جس کے بعد مرنے والوں کی تعداد پندرہ تک پہنچ گئی ہے۔

مظفر گڑھ کے علاقے راجن پور میں زہریلی لسی پینے سے ہلاکتوں کا سلسلہ جاری ہے۔ جہاں نشتر اسپتال میں زیر علاج ایک اور بچی دم توڑ گئی۔ واقعہ میں ملوث ملزمان کو آج انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

پولیس کے مطابق معاملہ زبردستی شادی کا شاخسانہ نکلا۔ دوسری جانب واقعہ میں ملوث دو خواتین سمیت تین ملزمان کو آج ڈی جی خان میں انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

ملزمان میں آسیہ، اس کا دوست شاہد اور ممانی زرینہ شامل ہیں۔ آسیہ نے دودھ میں زہر ملانے کا اعتراف کرلیا تھا۔ زہریلی لسی سے متاثرہ 8 افراد تاحال نشتر اسپتال اور چلڈرن کمپلیکس اسپتال ملتان میں زیر علاج ہیں۔ سات روز قبل آسیہ نے شوہر امجد کے دودھ کے گلاس میں زہر ملا دیا تھا۔

امجد نے دودھ نہ پیا تو ماں نے دہی جمانے کے لئے گھر میں رکھے باقی دودھ میں ملا دیا تھا۔ اسی دہی کی لسی بنی اور مکھن کھانے سے ستائیس افراد متاثر ہوئے، جن میں سے پندرہ دم توڑ چکے ہیں۔ پولیس کے مطابق آسیہ نے زبردستی امجد سے شادی کا انتقام لینے کے لئے زہر ملایا۔  سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube