Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  14

حلف لےکرجھوٹ بولنےسےملک پرعذاب نازل ہوتاہے،سپریم کورٹ

SAMAA | - Posted: Aug 15, 2017 | Last Updated: 5 years ago
SAMAA |
Posted: Aug 15, 2017 | Last Updated: 5 years ago

اسلام آباد: سپریم کورٹ میں قتل کے مقدمہ میں بریت کی درخواست پرججز ناقص استغاثہ پر پھٹ پڑے ۔جسٹس دوست محمد نے ریمارکس دیئے کہ حلف لے کرجھوٹ بولنے سے ہی ملک پرعذاب نازل ہوتا ہے ۔ملک میں دو وزرائے اعظم کا قتل اب تک معمہ بنا ہوا ہے ۔

سپریم کورٹ میں قتل کے مقدمے کے ملزم کی بریت کی درخواست پر سماعت ہوئی۔6 مرتبہ سزائےموت 6 مرتبہ عمر قید میں تبدیل کرنےپرناقص تفتیش پر عدالت کا اظہار برہمی کی۔جسٹس دوست محمد نے ریمارکس دیے کہ بڑے شخص کے قتل کا مقدمہ ہوتا تو تفتیش کسی اور طریقے سے ہوتی،حلف لیکر جھوٹ بولنے سے ہی ملک پر عذاب نازل ہوتا ہے۔استغاثہ کے نئے نظام سے بہتری کے بجائے خرابی پیدا ہوئی۔ملک میں دو وزرائے اعظم قتل کر دیے گئے جن کےقتل اب تک معمہ بنے ہوئے ہیں۔

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے کہاکہ پولیس افسران دفاتر میں بیٹھ کر کام کرتے ہیں ،ذمہ داری کا احساس نہیں۔جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دیےکہ ٹرائل کورٹ نے ملزم کی عمر کا تعین کیوں نہیں کیا۔مقدمہ بناتے وقت ڈکیتی کا ذکر کیا گیا،اصل بات کچھ اورلگتی ہے۔ملزم غلام مصطفی پر پاک پتن میں 6 افراد کو قتل کرنے کا الزام ہے

ہائی کورٹ نے ملزم کو 6 مرتبہ سزائے موت کا ٹرائل کورٹ کا فیصلہ برقرار رکھا تھا۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
Facebook Twitter Youtube