Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  14

یوم علی؛ملک بھرمیں سیکورٹی کےسخت ترین اتنظامات

SAMAA | - Posted: Jun 17, 2017 | Last Updated: 5 years ago
SAMAA |
Posted: Jun 17, 2017 | Last Updated: 5 years ago

کراچی: يوم علي پر فول پروف سيکيورٹي پلان تيارہے۔جلوسوں کي حفاظت کے ليے ہزاروں پوليس اہلکاروں کي ڈيوٹياں لگ گئيں۔روٹ کے اطراف عمارتوں پر شارپ شوٹرز تعينات کيے جائيں گے۔لاہور ميں موبائل فون سروس اور موٹرسائيکل کي ڈبل سواري پر بھي پابندي ہوگي۔

يوم علي پر سيکيورٹي کا کڑا پہرہ ہوگا۔کراچي ميں مرکزي جلوس نشتر پارک سے برآمد ہوکر کھارادر ميں ختم ہوگاجس کي سيکيورٹي ساڑھے پانچ ہزار سے زائد اہلکار سنبھاليں گے۔جلوس کے راستے ميں عمارتوں پر شارپ شوٹرز تعينات ہوں گے۔ايم اے جناح روڈ اور پريڈي اسٹريٹ عام ٹريفک کيلئے بند رہے گي۔

جڑواں شہروں ميں جلوس کے راستوں کوکنٹينرز اور خاردار تاريں لگاکر سيل کرديا گياہے۔دو ہزار سے زائد پوليس اہلکاروں کي ڈيوٹياں لگ گئی ہیں۔شرکا کو واک تھرو گيٹ سے گزارا جائے گا۔کيمرے کي آنکھ بھي ہر سرگرمي پر نظر رکھے گي۔

لاہور ميں جلوس کي گزرگاہ پر موبائل سروس بند رہے گي۔موٹرسائيکل کي ڈبل سواري پر بھي پابندي ہوگي۔سات ہزار اہلکاروں کو جلوس کي سيکيورٹي کي ذمہ داري ديدي گئي ہے،رينجرز اسٹينڈ بائي پر رہے گي۔ہيلي کاپٹر کے ذريعے فضائي نگراني کا بھي بندوبست کيا گيا ہے۔

کوئٹہ ميں جلوس کے روٹ پر تمام دکانيں سيل کردي گئيں جبکہ پوليس کے ساتھ ايف سي بھي سيکيورٹي سنبھالے گي۔

فيصل آباد ميں يوم علي کے بارہ جلوس نکالے جائيں گےجن کي حفاظت سترہ سو پوليس اہلکار کريں گے۔ملتان ميں دو ہزار سے زائد اہلکار جلوسوں کي سيکيورٹي پر مامور ہوں گے۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
Facebook Twitter Youtube