Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  14

حیات آباددھماکا؛تحقیقات میں اہم پیشرفت

SAMAA | - Posted: Feb 16, 2017 | Last Updated: 5 years ago
SAMAA |
Posted: Feb 16, 2017 | Last Updated: 5 years ago

Hayatabad PDA Office Blast 1600 Ex New Psh 15-02

پشاور:ججزکی وین پرحملے ميں استعمال ہونے والي موٹرسائيکل کا انجن نمبرمل گيا۔خود کش حملہ آورکا چہرہ بھی قابل شناخت ہے۔ سہولت کاروں کی موجودگی کابھی انکشاف ہوگیا۔

گزشتہ روزپشاورکے علاقے حیات آباد میں ججزکی وین پرحملہ کرنے والے خود کش دہشتگرد کی موٹر سائیکل کا انجن نمبر مل گیا ہے۔
پولیس موٹرسائیکل مالک کي تلاش کے لیے ايکسائزاورموٹرسائيکل ڈيلرزسے رابطے کر رہی ہے۔

پولیس کے مطابق ڈی این اے ٹیسٹ کے لیے خود کش بمبارکے نمونے حاصل کرلیے گئے ہیں، خود کش حملہ آور کا چہرہ قابل شناخت ہے۔ ابتدائی تحقیقات میں سہولت کاروں کی موجودگی کا انکشاف بھی ہوا ہے۔ تفتیشی ذرائع کے مطابق حملہ آورتنہا نہيں تھابلکہ ريکي کے بعد حملہ آورکوگاڑي کے راستے ميں چھوڑا گيا۔ حملہ آور رنگ روڈ يا ملحقہ قبائلي علاقے سے حيات آباد ميں داخل ہوا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز پشاور کے حساس علاقے حیات آباد میں ججز کی گاڑی کو خود کش حملے سے نشانہ بنایا گیاتھا۔ گاڑی میں  سول جج آصف جدون اور دیگر تین خواتین ججز رابعہ، تحریم اور آصفہ موجود تھیں۔حملے میں گاڑی کے ڈرائیور سمیت تین افراد جاں بحق جبکہ ججز سمیت متعدد افراد زخمی ہوئے تھے۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
Facebook Twitter Youtube