Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  16

پاکستان اور برطانیہ کا انسداد دہشتگردی کیلئے مشترکہ ٹیم تشکیل دینے کا فیصلہ

SAMAA | - Posted: Apr 26, 2016 | Last Updated: 6 years ago
SAMAA |
Posted: Apr 26, 2016 | Last Updated: 6 years ago

Nisar May

لندن : پاکستان اور برطانیہ نے انسداد دہشتگردی کیلئے مشترکہ ٹیم تشکیل دینے کا فیصلہ کرلیا، وزیر داخلہ چوہدری نثار کا کہنا ہے کہ دہشتگردوں کے ساتھ کوئی نرمی نہیں برتی جائے گی۔ برطانوی ہم منصب سے ملاقات میں ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس میں تعاون سے متعلق بھی تبادلہ خیال ہوا، وہ بولے کہ راء الزامات سے متعلق سابق ڈپٹی ہائی کمشنر سے بھی تفتیش ہوگی۔

وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے لندن میں برطانوی ہم منصب تھریسا مے کے ساتھ ملاقات کی، جس میں خطے کی سیکیورٹٰی صورتحال، ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس سمیت مختلف امور پر بات چیت کی گئی۔

وزیر داخلہ چوہدری نثار نے کہا کہ قانون نافذ کرنیوالے اداروں کی کوششوں سے ملک میں امن و امان کی صورتحال بہت بہتر ہوئی ہے، معصوم لوگوں کو نشانہ بنانے والے افراد کے ساتھ کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی۔

وزیر داخلہ نے پاکستان کے طالبعلموں اور کاروباری افراد کو برطانوی ویزے کے حصول میں شدید مشکلات کا ذکر کیا، جس پر برطانوی وزیر داخلہ نے یقین دہانی کروائی کہ وہ اس معاملے میں پاکستان ہائی کمیشن لندن اور اسلام آباد میں برطانوی سفارتخانے کے حکام سے بات کریں گی۔

اس موقع پر انسداد دہشتگردی کیلئے مشترکہ ٹیم بنانئے کا فیصلہ بھی کیا گیا، جس میں برطانوی انسداد دہشت گردی ماہرین اور نیکٹا کے حکام شامل ہونگے۔

ملاقات میں ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس اور منی لانڈرنگ تحقیقات کیلئے دونوں ممالک کے حکام  کے دوروں کا فیصلہ بھی کیا گیا۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube