Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  17

عدلیہ،اسٹیبلشمنٹ اورپارلیمنٹ کواپنااپناکام کرناچاہیے،خورشیدشاہ

SAMAA | - Posted: Aug 2, 2015 | Last Updated: 7 years ago
SAMAA |
Posted: Aug 2, 2015 | Last Updated: 7 years ago

ویب ایڈیٹر:

رحیم یار خان : قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ الطاف حسین بیانات دینے کے بعد بھائی بن جاتے ہیں، کبھی ہمارے کبھی کسی اور کے، ایسا بیان پہلی بار آتا تو حیرانگی ہوتی، اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ تمام داروں کو اپنی حدود میں رہ کر کام کرنا چاہئیے، عدلیہ، اسٹیبلشمنٹ اور پارلیمنٹ اپنا اپنا کام کریں۔

 

رحیم یار خان میں میڈیا سے گفت گر کرتے ہوئے قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ پنجاب ذمہ دار سیاستدان ہیں، شہباز شریف کو بیان سوچ سمجھ کر دینا چاہیے،ذرداری صاحب باہر گھومنے گئے ہیں، بعد میں واپس آجائیں گے۔

 

خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ ٹیکس کیلئے پجارو اور پراڈو والوں کو پکڑنا چاہیے، لوگ کہتے ہیں میں نے نواز شریف کو بچایا، میں نے جمہوریت کو بچایا ہے، الطاف حسین کی تقرر سے متعلق خورشید شاہ نے کہا کہ الطاف حسین حکومت کیخلاف بیان دیتے ہیں، اور مکر جاتے ہیں، الطاف حسین بعد میں پھر بھائی بھی بن جاتے ہیں، 1988سے کبھی ہم الطاف حسین کو بھائی بنا لیتے ہیں اور کبھی وہ ہمیں، انہوں نے حکومت کو مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ ن کو چاہیے کہ سب کو ساتھ لے کر چلیں، عدلیہ، اسٹیبلشمنٹ اور پارلیمنٹ کو اپنا اپنا کام کرنا چاہیے۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube