Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  16

انیس قائم خانی نے ڈاکٹر عمران فاروق قتل کے احکامات دیئے، معظم علی

SAMAA | - Posted: Jul 10, 2015 | Last Updated: 7 years ago
SAMAA |
Posted: Jul 10, 2015 | Last Updated: 7 years ago

ویب ایڈیٹر

کراچی : سماء نے معظم علی خان کے تہلکہ خیز انکشافات حاصل کرلئے، جے آئی ٹی کے سامنے مرکزی ملزم کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر عمران فاروق کو قتل کرنے کے احکامات انيس قائم خانی نے دیئے، واردات کيلئے کيک کاٹنے کا کوڈ ورڈ رکھا گيا، محسن علی نے ريکی کی۔

سماء نے متحدہ کے سینئر رہنماء ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس میں گرفتار مرکزی ملزم معظم علی کے سنسنی خیز انکشافات پر مبنی بیان کے مزید نکات حاصل کرلئے.

  • معظم علی کے جے آئی ٹی کو دیئے گئے بیان کے مزید سنسنی خیز اور اہم نکات.
  • خالد شمیم نے 2007ء میں بند لفافہ الطاف حسین کو پہنچانے کیلئے دیا۔
  • لفافے میں ڈاکٹر فاروق ستار، ڈاکٹر عمران فاروق اور محمد انور کی کرپشن رپورٹ تھی۔
  • کرپشن رپورٹ میں انیس قائم خانی اور شکیل عمر کے نام بھی تھے۔
  • الطاف حسین نے 100 روپے کے نوٹ پر اپنا آٹو گراف دیا تھا۔
  • الطاف حسین کو خالد شمیم کا پیغام دیا کہ ڈاکٹر عمران فاروق اپنی پارٹی بنارہے ہیں۔
  • محسن علی نے بتایا کہ ڈاکٹر عمران فاروق کی ریکی مکمل کرلی۔
  • ڈاکٹر عمران فاروق کیلئے ماموں کا کوڈ ورڈ طے ہوا، قتل کیلئے کیک کاٹنے کا کوڈ رکھا گیا۔
  • خالد شمیم نے محسن علی اور کاشف کو کراچی ایئر پورٹ سے لینے کا کہا۔
  • محسن اور کاشف باہر نہیں آئے تو میں گھر واپس چلا گیا، معظم علی
  • ڈاکٹر عمران فاروق قتل کے بارے میں 7 افراد کو علم تھا۔
  • قتل کے احکامات انیس قائم خانی کے ذریعے ملے۔

واضح رہے کہ 16 ستمبر 2010ء کو لندن میں ایم کیو ایم کے رہنماء ڈاکٹر عمران فاروق کو ان کے گھر کے باہر دو افراد نے چاقو اور اینٹوں کے وار کرکے قتل کردیا تھا، برطانوی پولیس، پاکستانی تحقیقاتی ادارے اس ہائی پروفائل قتل کیس کو حل کرنے کیلئے مل کر کام کررہی ہیں۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube