Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  16

عمران خان کے بیانات جوڈیشل کمیشن کارروائی میں مداخلت ہے، شاہد حامد

SAMAA | - Posted: May 13, 2015 | Last Updated: 7 years ago
SAMAA |
Posted: May 13, 2015 | Last Updated: 7 years ago

اسٹاف رپورٹ

اسلام آباد : ن ليگ کے وکيل شاہد حامد نے انکوائری کميشن کے اجلاس ميں چيئرمين تحريک انصاف کو آڑے ہاتھوں ليا، کہتے ہيں محبوب انور سے متعلق عمران خان کے بيانات کميشن کی کارروائی ميں مداخلت ہے، کمیشن نے حفيظ پيرزادہ کو ووٹرز، امیدواروں اور اضافی بیلٹ پیپرز کے حوالے سے اضافی دستاویزات جمع کرانے کی اجازت دے دی۔

مبينہ انتخالی دھاندلی کیلئے قائم 3 رکنی انکوائری کمیشن کے روبرو مسلم لیگ ن کے وکیل شاہد حامد کا کہنا تھا کہ عمران خان نے گزشتہ روز ميڈيا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق صوبائی الیکشن کمشنر کو جھوٹا کہا اور الزامات لگائے، ان کا یہ اقدام کمیشن کی کارروائی میں مداخلت ہے، محبوب انور کے جھوٹے یا سچے اور منظم دھاندلی ثابت ہونے کے حوالے سے فيصلہ کمیشن نے کرنا ہے۔

تحریک انصاف کے وکیل حفیظ پیرزادہ نے حیران کن طور پر ایک سوال کے بعد ہی محبوب انور پر جرح ختم کردی، چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ آپ نے سابق صوبائی الیکشن کمشنر پر جرح کیلئے مزید ایک دن مانگا تھا۔

کمیشن نے حفيظ پيرزادہ کو ووٹرز، امیدواروں اور اضافی بیلٹ پیپرز کے حوالے سے پرنٹنگ پریس کی اضافی دستاویزات جمع کرانے کی اجازت دے دی۔

کمیشن نے تحریک انصاف اور نون لیگ کے وکلاء کو چیمبر میں طلب کيا، عمران خان کے بيانات کے حوالے سے صحافيوں کے سوالات پر ن ليگ کے وکيل شاہد حامد نے کہا وہ صرف اتنا کہہ سکتے ہيں کہ آئندہ ایسا واقعہ نہیں ہوگا، کمیشن میں مزید سماعت جمعرات کو ہوگی۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
Facebook Twitter Youtube