Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  17

وزیراعلیٰ پنجاب کی حافظ نعیم کے اہلخانہ سے تعزیت، مجرموں کو سزا دلوانے کا اعلان

SAMAA | - Posted: Mar 22, 2015 | Last Updated: 7 years ago
SAMAA |
Posted: Mar 22, 2015 | Last Updated: 7 years ago

اسٹاف رپورٹ

لاہور : وزيراعلیٰ پنجاب سانحہ يوحنا آباد کے بعد بلوائيوں کے ہاتھوں قتل ہونيوالے حافظ نعيم کے اہلخانہ سے تعزيت کيلئے قصور پہنچ گئے، شہباز شريف نے انصاف اور مجرموں کو قرار واقعی سزا دلوانے کيساتھ ورثاء کيلئے 5 لاکھ روپے امداد کا اعلان بھی کيا۔

يوحنا آباد میں پندرہ مارچ کو دھماکوں کے بعد مشتعل مظاہرين نے قانون ہاتھ ميں ليتے ہوئے 2 معصوم لوگوں کو اپنے انتقام کی بھينٹ چڑھا ديا تھا، واقعہ پر اظہار افسوس اور مقتول حافظ نعيم کے اہلخانہ سے تعزيت کیلئے وزيراعلیٰ پنجاب آج 7 روز بعد اپنے جاہ و جلال کے ساتھ مصطفیٰ آباد قصور پہنچے، جہاں مقتول کے والد، بھائی اور ديگر اہلخانہ سے مختصر تعزيتی ملاقات کی۔

وزيراعلیٰ پنجاب نے مقتول کے ورثاء کو بتايا کہ 30 بلوائيوں کو گرفتار کرليا گيا، جن کیخلاف مقدمہ انسداد دہشتگردی عدالت ميں چلايا جائے گا۔

اس موقع پر غم سے نڈھال مقتول کے خاندان نے قاتلوں کو سخت ترين سزا دينے کا مطالبہ کيا، جس پر وزيراعلیٰ پنجاب مقتول کے بوڑھے والد کی داڑھی کو ہاتھ لگاکر بار بار انصاف فراہم کرنے کی یقین دہانی کراتے رہے۔

وزيراعلیٰ کی آمد کے باعث پورے علاقے ميں سيکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے اور علاقہ مکين کئی گھنٹے تک گھروں ميں محصور رہے۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube