Thursday, May 19, 2022  | 1443  شوّال  17

علامہ طاہر القادری نے 10 نکاتی انتخابی منشور کا اعلان کردیا

SAMAA | - Posted: Oct 19, 2014 | Last Updated: 8 years ago
SAMAA |
Posted: Oct 19, 2014 | Last Updated: 8 years ago

ویب ایڈیٹر

لاہور : علامہ طاہر القادری نے 10 نکاتی انتخابی منشور کا اعلان کردیا، روٹی، کپڑا، مکان، اور روزگار ہر شخص ملے گا، آدھی قیمت پرغریب کو اشیاء خور و نوش، میٹرک تک ہر بچے کو مفت تعلیم، ملازمین کے پے اسکیل دوبارہ بنائے جائیں گے، فرقہ واریت اور انتہاء پسندی، خواتین کیخلاف امتیازی قوانین کا خاتمہ، کاشتکاروں کیلئے مفت زمین دینے، غریبوں سے بجلی گیس کے بل پر ٹیکس نہ لینے کا اعلان کردیا، کہتے ہیں کہ لاہور نے انقلاب کے حق میں ریفرنڈم کردیا، یہ شہر ن کا ہوگا نا ں کا، ملک میں اب صرف قائداعظم ازم چلے گی،  انقلاب کے بعد پاکستان میں کرپشن فری سسٹم اور مثالی امن قائم ہوگا، ملک کو نظریاتی قیادت اور انقلاب چاہئے۔ پی اے ٹی سربرا نے حکمرانوں کو للکارا کہ تمہارا نظام کرپشن پر مک مکا اور پورے ملک کو برباد کرنے کا نام ہے، مک مکا لیڈر قابض رہے تو ملک کب تک چلے گا؟، عوام اٹھیں اور فرسودہ اور ظالم نظام سے ٹکرا جائیں، سانحہ ماڈل ٹاؤن پر خون کا بدلہ خون ہوگا، قصاص کے بغیر چین سے نہیں بیٹھیں گے، شہیدوں کا معاملہ قاتلوں کی پھانسی پر خرچ ہوگا۔

لاہور میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر علامہ طاہر القادری کا کہنا تھا کہ انقلاب نے لوگوں کو ظلم کیخلاف کھڑے ہونے کی طاقت دی، کسی شہید کی دیت نہیں ہوگی، سانحہ ماڈل ٹاؤن پر خون کا بدلہ خون ہوگا، شہداء کا بدلہ قصاص ہوگا، اس کے بغیر چین سے نہیں بیٹھیں گے، سلطنت کی دولت کو جوتے کی نوک پر رکھتا ہوں۔

ان کا کہنا ہے کہ شہیدوں کا معاملہ قاتلوں کی پھانسی پر ختم ہوگا، لاہور نے انقلاب کے حق میں ریفرنڈم دیدیا، لاہور ‘‘ن’’ کا ہوگا نہ ‘‘ں’’ کا ہوگا، جو قوم ایٹم بم بناسکتی ہے کیا وہ شہر کی صفائی نہیں کرسکتی؟، غیرملکیوں کو ٹھیکہ دینے سے پیسہ اور کمیشن آتا ہے۔

طاہر القادری کہتے ہیں پاکستان میں اب صرف ‘‘قائد اعظم ازم’’ چلے گا، ملک میں کمیونزم، ایکسٹریم ازم، مُلاازم سب چل چکے، انقلاب کے بعد پاکستان میں کرپشن فری سسٹم اور مثالی امن قائم ہوگا، پاکستان کو نظریاتی قیادت اور انقلاب چاہئے، پاکستان کو جی 20، بریکس، ایکو اور شنگھائی کونسل کا حصہ بنانا ہمارا ہدف ہے، ملک آج بھی سنگاپور، ہانگ کانگ بنایا جاسکتا ہے، میرا نعرہ ہے پاکستان کے بغیر ایشیاء کی اہمیت نہیں۔

پی اے ٹی سربراہ نے 10 نکاتی انتخابی منشور کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ روٹی، کپڑا، مکان اور روزگار ہر شخص کو ملے گا، آدھی قیمت پر غریب کو اشیائے خور و نوش اور میٹرک تک ہر بچے کو مفت تعلیم دیں گے، ملازمین کے پے اسکیل دوبارہ بنائے جائیں گے، ملک سے فرقہ واریت، انتہاء پسندی اور خواتین کیخلاف امتیازی قوانین کا خاتمہ کرینگے، کاشتکاروں کو مفت زمین دینگے اور غریبوں پر سے بجلی و گیس کے بل پر ٹیکس ختم کرینگے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کے پاس بجلی کا کوئی منصوبہ نہیں، صرف دھوکا ہے، 9 منصوبے مکمل ہونے کے بعد 5 ہزار میگا واٹ بجلی ملے گی، 2017ء تک بجلی کی ضرورت 35 ہزار میگا واٹ ہوگی، ڈویژن کی سطح پر صوبے بنانا ہوں گے، پنجاب کو 7 سے 9 صوبوں میں تقسیم کرنا چاہتے ہیں، اختیارات کو نچلی سطح تک منتقل کرنے سے ہی مسائل حل ہونگے، حکمران رہے تو قوم کا مسئلہ کبھی حل نہیں ہوگا، ملک و قوم کو 12 طریقوں سے بجلی پیدا کرکے دیں گے، انقلاب کے بعد واپڈا کا ادارہ ختم کردیں گے، بجلی ہوگی تو صنعت چلے گی، بیروزگاری کا خاتم ہوگا۔

وہ کہتے ہیں کہ نہروں سولر سمندر اور دیگر ذرائع سے بجلی پیدا کرینگے، اقتدار بڑے ہاتھیوں کے ہاتھ میں نہیں رہے گا، پاکستان میں جاب پلاننگ نام کی کوئی چیز نہیں، اس کی وجہ سے بیروزگاری عام ہے، موجودہ نظام غریب کا خون چوسنے والا ہے، اس میں غریب کا کوئی حصہ نہیں۔

پی اے ٹی سربراہ نے کہا کہ افغانستان کا 8 فیصد بجٹ جبکہ پاکستان کا جی ڈی پی کا صرف ایک فیصد صحت پر خرچ کرتا ہے، تمہارا نظام کرپشن پر مک مکا اور ملک کو برباد کرنے کا نام ہے، مک مکا لیڈر قابض رہے تو ملک کب تک چلے گا؟، حکمرانوں نے ہر ادارہ کرپٹ بنادیا، آج عبدالستار ایدھی صاحب جیسا شخص بھی ڈاکوؤں سے محفوظ نہیں، ملک کو پولیس اسٹیٹ بنادیا گیا ہے۔

طاہر القادری کا کہنا ہے کہ پہلے احتساب ہوگا اور گند صاف کی جائے گی، اس کے بعد اصلاحات اور پھر انتخابات ہوں گے، الیکشن جبراً مسلط ہوئے تو انتخابی میدان خالی نہیں چھوڑیں گے، عوام ممبر شپ کیلئے 80027 پر ایس ایم ایس کرے، انقلاب تک ہماری جدوجہد جاری رہے گی، انقلاب کی جنگ کیلئےہر قسم کی سپورٹ چاہئے، نوٹ، ووٹ اور سپورٹ دینا ہوگی، یہ سوچ کر تیاری کریں کہ 3 ماہ بعد الیکشن ہیں۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube