Thursday, May 19, 2022  | 1443  شوّال  17

جیو نیوز، جیو تیز، جیو انٹرٹینمنٹ کے لائسنس معطل، پیمرا کا دفاتر سیل کرنیکا بھی حکم

SAMAA | - Posted: May 20, 2014 | Last Updated: 8 years ago
SAMAA |
Posted: May 20, 2014 | Last Updated: 8 years ago

اسٹاف رپورٹ

اسلام آباد : پیمرا نے جیو نیوز، جیو تیز اور جیو انٹرٹینمنٹ کے لائسنس فوری طور پر معطل کردیئے، آج رات نجی چینلز آف ایئر کردیئے جائیں گے، دفاتر سیل کرنے کی بھی ہدایت کردی گئی ہے، میاں شمس کا کہنا ہے کہ ہم جیو کا لائسنس منسوخ بھی کرسکتے ہیں، اس حوالے سے حتمی فیصلہ 28 مئی کو کیا جائے گا۔

پیمرا کا اجلاس اسلام آباد میں ہوا جس میں 5 پرائیوٹ ارکان مس شمسہ، زیبا حسن، فریحہ افتخار،اسرار عباسی اور میاں شمس نے شرکت کی، کوئی حکومتی رکن اہم اجلاس میں موجود نہیں تھا، اجلاس میں جیو نیوز، جیو تیز اور جیو انٹرٹینمنٹ کے لائسنس فوری طور پر معطل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے میاں شمس نے کہا کہ جیو کے تینوں چینلز کے لائسنس فوری طور پر معطل کردیئے گئے ہیں جبکہ جیو کے دفاتر بھی سیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، ہم جیو کے لائسنس منسوخ بھی کرسکتے ہیں تاہم چاہتے ہیں کہ حکومتی ارکان بھی اجلاس میں شریک ہوں اور متفقہ طور پر فیصلہ کیا جائے، جیو کے تینوں لائسنسوں کی منسوخی کا حتمی فیصلہ 28 مئی کو ہوگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ تمام پرائیوٹ ممبران نے پیمرا رولز اور آئین پاکستان کو مدنظر رکھا، پیمرا کو درخواست دینا قابل ستائش ہے، فوج اور آئی ایس آئی نے ایک ماہ صبر کا مظاہرہ کیا، چیئرمین کی غیرموجودگی میں کمیٹی اپنا کام کرے گی، اگلی میٹنگ میں چیئرمین کے اختیارات کیلئے کمیٹی تشکیل دیں گے۔

میاں شمس کہتے ہیں کہ میر شکیل الرحمان نے پیمرا اتھارٹی پر اپنی چمک دمک کا استعمال کیا، مجھے بھی میر شکیل کا فون آیا، میں نے بات کرنے سے انکار کردیا، پیمرا رولز کے مطابق تمام اختیارات اتھارٹی ممبر کو ہیں، آج کے پیمرا اجلاس میں 5 ممبران نے شرکت کی، سرکاری اہلکار اجلاس میں آتے تو ملکر فیصلے کرتے۔

اسرار عباسی کا اس موقع پر کہنا تھا کہ آج رات جیو نیوز کو آف ایئر کردیا جائے گا جبکہ ان کے ہیڈ آفس بھی سیل کردیئے جائیں گے جبکہ دیگر 2 چینلز بھی کل سے آف ایئر ہوجائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اتھارٹی کوئی بھی فیصلہ کرسکتی ہے، کورم کیلئے کیلئے 4 ممبر کا ہونا ضروری ہوتا ہے، اجلاس میں 5 ممبران موجود تھے، سی او سی کراچی نے فیصلہ کرکے سفارش بھیجی، جیو کے 4 لائسنس کی سیکیورٹی کلیئرنس کیلئے بھی وزارت داخلہ کو لکھ دیا۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube