Monday, May 16, 2022  | 1443  شوّال  15

خیبرپختونخوا حکومت کو کوئی خطرہ نہیں، سمجھوتہ نہیں کرینگے، شاہ فرمان

SAMAA | - Posted: Nov 13, 2013 | Last Updated: 9 years ago
SAMAA |
Posted: Nov 13, 2013 | Last Updated: 9 years ago

اسٹاف رپورٹ

اسلام آباد : وزیراطلاعات خیبرپختونخوا شاہ فرمان کا کہنا ہے کہ قومی وطن پارٹی کے وزراء کو کرپشن کے الزامات پر ہٹایا گیا، صوبائی حکومت کو کوئی خطرہ نہیں، مقاصد کے حصول پر سمجھوتہ نہیں کرینگے، امین فہیم کہتے ہیں کہ پالیسی بنانے میں اپنے مفاد کو مدنظر رکھنا ہوگا، حکومت طالبان کے ساتھ مذاکرات یا آپریشن سے متعلق کھل کر فیصلہ کرے۔

سماء کے پروگرام لائیو ود ندیم ملک میں اظہار خیال کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور خیبرپختونخوا کے وزیر اطلاعات شاہ فرمان کا کہنا تھا کہ حکومت میں رہنے یا نہ رہنے کا فیصلہ قومی وطن پارٹی خود کرے گی، سکندر شیر پاؤ کے مستعفی ہونے سے متعلق علم نہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ  پی ٹی آئی حکومت میں رہنے کیلئے سمجھوتے نہیں کرے گی، 2 وزراء کو کرپشن کے الزامات پر ہٹایا گیا، ان کے نکلنے سے خیبرپختونخوا حکومت کو کوئی خطرہ نہیں، ہمارے پاس درکار اکثریت موجود ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی نے لانگ ٹرم ایجنڈا بنایا ہوا ہے اپنے مقاصد حاصل کرتے جارہے ہیں، طالبان کی صرف ایک ہی شرط تھی کہ میزائل حملے روکے جائیں کیوں کہ 3 بار مذاکرات کے عمل کو میزائل حملوں سے سبوتاژ کیا گیا۔

ندیم ملک سے گفتگو میں پی پی رہنما مخدوم امین فہیم کا کہنا تھا کہ امریکا 2014ء میں افغانستان سے اپنی فوج نکال رہا ہے تاہم پاکستان میں کیا ہوگا اس کا جواب سب چاہتے ہیں، ضیاء دور کی پالیسیوں کے باعث آج ہم یہ وقت دیکھ رہے ہیں۔

وہ کہتے ہیں کہ اپنی پالیسی اپنے لوگوں کے مفاد کو مدنظر رکھ کر بنانی ہوگی،  حکومت طالبان سے مذاکرات یا آپریشن کا فیصلہ کھل  کر کرے۔

انہوں نے کہا کہ عوام نے جنہیں مینڈیٹ دیا ہے انہیں وقت ملنا چاہئے، پاکستان کی سلامتی اور خوشحالی کیلئے کام کرنا چاہئے، آرمی چیف کی تقرری سے متعلق انہوں نے کہا کہ پاک فوج کو فیصلہ کرنے دیا جائے۔

کالم نگار اور تجزیہ کار اوریا مقبول جان کا کہنا ہے کہ طالبان سے مذاکرات کے معاملے پر فیصلہ ملکی مفادات کو سامنے رکھ کر کریں، یہ نہ سوچیں کہ افغانستان، امریکا، چین اور دیگر ممالک پر اس کا کیا اثر پڑے گا۔

معروف قانون دان جسٹس طارق محمود کہتے ہیں کہ حکومت کو عوام نے تمام مسائل کے حل کیلئے مینڈیٹ دیا تھا، حکومت کو جو کرنا وہ فوری طور پر کرے، قوم دہشت گردی کیخلاف جنگ کی بہت بڑی قیمت ادا کررہی ہے۔

لائیو ود ندیم ملک میں ان کا کہنا تھا کہ ملکی مسائل بہت ہیں، موجودہ حکومت برقرار رہنی چاہئے، بلدیاتی انتخابات سے متعلق سپریم کورٹ کا فیصلہ درست اور آئینی ہے۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube