Thursday, May 19, 2022  | 1443  شوّال  17

میمو کمیشن کا اجلاس، حقانی کی درخواستوں کی سماعت

SAMAA | - Posted: Feb 23, 2012 | Last Updated: 10 years ago
SAMAA |
Posted: Feb 23, 2012 | Last Updated: 10 years ago

اسٹاف رپورٹ

اسلام آباد: میمو کیس تحقیقاتی کمیشن نے حسین حقانی کی جانب سے دائر تینوں درخواستیں نمٹا دی ہیں ۔۔ کمیشن نے کیمروں کے ذریعے اسکرینوں  کی فوٹیج بنانے کا نوٹس لےلیا۔۔

اسلام آباد ہائی کورٹ میں میمو کمیشن کا اجلاس بلوچستان ہائی کورٹ کے چیف جسٹس ۔۔ قاضی فائز عیسٰی  کی صدارت میں جاری ہے ۔۔ کمیشن نے منصور اعجاز کے وکیل اکرم شیخ کو ہدایت کی کہ منصور اعجاز سے پوچھ کر بتایا جائے کہ زاہد بخاری بیرون ملک جانا چاہیں تو وہ جرح کیلئے کب دستیاب ہوں گے ۔۔

کمیشن کا کہنا تھا کہ شہادتوں سے متعلق دستیاب تمام ریکارڈ فریقین کو فراہم کردیا گیا ہے۔۔ منصور اعجاز کا بیان مکمل کرنے کے بعد فورنزک شہادتیں ریکارڈ کی جائیں گی ۔۔  

حسین حقانی کی جانب سے دائر تین درخواستوں پر ان کے وکیل زاہد بخاری نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ براہ راست شہادتوں سے پہلے فورنزک شہادتیں جمع کی جائیں ۔۔ کمیشن کا کہنا تھا کہ پہلے منصور اعجاز کا بیان ہوگا پھر وہ اپنا موبائل ۔۔۔ فورنزک شہادت کیلئے حوالے کردیں گے ۔۔

زاہد بخاری نے کہا کہ فورنزک شہادت کے بغیر وہ جرح کیسے کریں گے۔ اگر زبانی شہادت پہلے ہوگی تو قانون شہادت کے متعلق ان کی جرح بےسود ہوگی ۔۔ زاہد بخاری نے کہا کہ اکرم شیخ، بلیک بیری کمپنی کے جواب ، شواہد اور بیانات کی مصدقہ نقول فراہم کریں ۔۔ اور انہیں اتنا وقت دیا جائے وہ جرح کیلئے لندن پہنچ سکیں ۔۔

زاہد بخاری کے دلائل مکمل ہونے کے بعد اکرم شیخ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ منصور اعجاز کے موبائل میں بعض چیزیں ان کی ذاتی نوعیت کی ہیں، جو حوالے نہیں کرسکتے۔۔ 

کمیشن نے کیمروں کے ذریعے اسکرینوں کی فوٹیج بنانے کا نوٹس لے لیا ہےاور انتظامیہ کو ہدایت کی ہے کہ موبائل فون کے ذریعے بھی اسکرینوں کی فوٹیج نہ بنانے دی جائے ۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube