Wednesday, May 18, 2022  | 1443  شوّال  16

نوازحکومت کے خلاف مشرف کے اقدام کو 12 سال بیت گئے

SAMAA | - Posted: Oct 12, 2011 | Last Updated: 11 years ago
SAMAA |
Posted: Oct 12, 2011 | Last Updated: 11 years ago

اسٹاف رپورٹ
کراچی: سابق آرمی چیف جنرل ریٹائرڈ پرویزمشرف کی جانب سے مسلم لیگ نون کی حکومت کے خاتمے کو آج بارہ سال ہوگئے۔ نون لیگ اس دن کو یوم سیاہ کے طور پر مناتی ہے اور ماضی میں کی جانے والی غلطیوں کو نہ دہرانے کا عزم کیے ہوئے ہے۔

12 اکتوبر 1999 کو جب مسلم لیگ نون کا تختہ الٹا گیا تو نوازشریف دوتہائی اکثریت رکھتے تھے، اپنے دور اقتدار کے دوران ان کی ملک اہم اداروں کے سربراہان کے ساتھ اختیارات کی جنگ رہی، حکومت کی برطرفی سے قبل نواز شریف چاہتے تھے کہ آرمی چیف پرویز مشرف کو برطرف کر کےاُس وقت کے آئی ایس آئی کے سربراہ خواجہ ضیاء الدین  کو نیا آرمی چیف مقررکردیں لیکن  پرویز مشرف نے اقتدار پر قبصہ کر لیا۔
 
انہوں نے  برسر اقتدار آ کر برطرف حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ پاک فوج کو تقسیم کرنا چاہ رہی تھی جبکہ ملک میں کرپشن اور بیڈ گورنس کے الزامات بھی لگائے گئے۔

برطرفی کے بعد نواز شریف کو گرفتار کرکے ان کے خلاف طیارہ سازش کیس سمیت متعدد مقدمات چلائے گئے تاہم بعد ازاں ایک معاہدہ کے تحت سزائیں معطل ہو گئیں اور نواز شریف کو جلا وطن کر دیا گیا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
Facebook Twitter Youtube