Samaa Logo

پی اے سی نے درآمدی سگریٹس پر ٹیکس بڑھانے کی سفارش کردی

ٹیکس بڑھانےسے300ارب روپےاضافی ریونیو جمع ہوسکتا ہے، کمیٹی
Oct 19, 2022

پارلیمنٹ کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے پی اےسی نےدرآمدی سگریٹس پرٹیکس بڑھانےکی سفارش کردی۔

چیئرمین نور عالم خان کی سربراہی میں پارلیمنٹ کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اجلاس ہوا ۔

چیئرمین ایف بی آر نے کمیٹی کو بتایا کہ مقامی اور درآمدی سگریٹس پر 17 فیصد جی ایس ٹی لاگوہے، فیڈرل ایکسائزڈیوٹی الگ سےوصول کی جارہی ہے۔

چیئرمین ایف بی آر نے بتایا کہ مقامی اور درآمدی سگریٹ کے ہر پیکٹ پر 41 روپے ٹیکس لیا جارہا ہے، اس کے علاوہ ٹیئر 1 سگریٹ پر فی ایک ہزار اسٹک 6500 روپے جب کہ ٹیئر 2 سگریٹ پر فی ایک ہزار اسٹک پر 2050 روپے ٹیکس ہے۔

چیئرمین اہف بی آر نے کہا کہ مقامی اور درآمدی سگریٹس پر 17 فیصد جی ایس ٹی لاگو ہے، فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی الگ سے وصول کی جارہی ہے، تمباکو سیکٹر سے سالانہ 160 ارب روپے ٹیکس ملتا ہے، صنعت سے مزید 60 ارب تک ٹیکس وصولی کی گنجائش ہے، 157 ارب روپے یعنی 98 فیصد ٹیکس 2 ملٹی نیشنل کمپنیاں دے رہی ہیں، 20 دیگر کمپنیوں سے 3 ارب روپے ٹیکس حاصل ہورہا ہے،

کمیٹی نے تجویز دی کہ درآمدی سگریٹ پر ٹیکس مزید بڑھانے سے ریونیو میں اضافہ ہوسکتا ہے، ٹیکس بڑھانےسے300ارب روپےاضافی ریونیو جمع ہوسکتا ہے۔

Read Comments