احتساب کےلئے سپریم کورٹ اور نیب کچھوے کی چال چل رہے

لاہور: امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق کا کہنا ہے کہ احتساب کے لیے سپریم کورٹ اور نیب کچھوے کی چال چل رہے ہیں، مگر قوم خرگوش کی چال سے احتساب چاہتی ہے۔ پاناما لیکس کے دیگر 436 کرداروں کے خلاف سماعت میں تیزی لائی جائے، انھیں بھی جلد از جلد احتساب کے کٹہرے میں لایا جائے۔


سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک بیان میں سراج الحق کا کہنا تھا کہ جن لوگوں نے ملک و قوم کو لوٹا ہے، انھیں گرفتار کر کے جیلوں میں بندکیا جائے۔ عدالت عالیہ بیرونی بینکوں میں منتقل کی گئی دولت کی واپسی کا ایک میکنزم بنائے۔

سراج الحق کا مزید کہنا تھا کہ سینیٹ الیکشن اور عام انتخابات پر گرد و غبار کے بادل دن بدن گہرے ہو رہے ہیں۔ الیکشن تبدیلی کا واحد راستہ ہے، انتخابی عمل میں کوئی خلل نہیں پڑنا چاہیے۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ امریکا ہماری زمینی اور فضائی حدود بھی استعمال کر رہا ہے اور آنکھیں بھی دکھا رہا ہے۔ نیٹو سپلائی سے سڑکوں کی تباہی، مالی نقصان اور فضائی آلودگی کے سوا کچھ ہاتھ نہیں آیا۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ نیٹو سپلائی لائن فوری طور پر بند کی جائے۔ سماء

SC

SIRAJ UL HAQ

ACCOUNTABILITY

NATO

snail's pace

Tabool ads will show in this div