امریکا پاکستان کے بغیر افغان جنگ نہیں جیت سکتا

نیویارک : امریکی اخبار نیو یارک ٹائمز نے بھی اپنے صدر کو خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی صدر کو دہشت گردی کی جنگ میں پاکستان کے ساتھ تعلقات پر نظر ثانی کی ضرورت ہے، امریکا پاکستان کے بغیر افغانستان میں جنگ نہیں جیت سکتا۔

امریکی اخبار نیویارک ٹائمز نے خبر دار کیا ہے کہ صدر ٹرمپ اس بات کے متحمل نہیں ہوسکتے کہ پاکستان کو چھوڑ دیں۔ اخبار لکھتا ہے کہ پاکستان کے خلاف فیصلے سے لگتا نہیں کہ ٹرمپ کے پاس اثرات سے نمٹنے کی کوئی جامع پالیسی بھی موجود ہے۔ پرانے پارٹنرز کو امریکا سے دور کرنے کا فیصلہ چین کے لیے فائدہ مند اور خطے کیلئے تباہ کن ثابت ہوگا۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے پاکستان کے خلاف فیصلے پر خود امریکی میڈیا نے بھی چیختے ہوئے کہا کہ امریکی صدر کو پاکستان سے تعاون پر شور مچانے کے بجائے بات چیت کی ضرورت ہے، امریکی اخبار کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان سے زیادہ تعمیری تعاون کیلئے ٹرمپ کو کئی اور سفارتی طریقے اپنانے چاہئیں، سعودیہ عرب اور امارات کے ذریعے طالبان کی خلیج فارس میں فنڈز اکھٹا کرنے کی کوشش ناکام بنانا چاہیئے۔

اخبار کے مطابق پاکستان نے کئی اہم خفیہ معلومات امریکا کو فراہم کیں۔ ٹرمپ انتظامیہ دیگر سفارتی طریقےاپنائے ،سعودی عرب اورامارات سے تعلقات استعمال میں لانے چاہییں،شورمچانے کے بجائے خاموش بات چیت کی ضرورت ہے۔

اخبار کی جانب سے اس بات کا خدشہ بھی ظاہر کیا گیا ہے کہ پاکستان چین کے مزید قریب ہونے کے بعد بھارت کے خلاف زیادہ سخت رویہ اختیار کر سکتا ہے۔ امریکی صدر اس بات کے متحمل نہیں ہوسکتے کہ پاکستان کو چھوڑ دیں

نیویارک ٹائمز مزید کہتا ہے کہ اب یہ دیکھنا ہوگا کہ امداد منجمد کرنے پر پاکستان تعاون کرتا بھی ہے یا نہیں؟افغانستان کے لیے ہر فوجی پرواز پاکستانی فضا سے گزرتی ہے، زیادہ ترسپلائی پاکستانی ریل یاروڈ سے ہوتی ہے۔ امریکا کو دی گئی رسائی پاکستان کسی بھی لمحے بند کرسکتا ہے۔

ادھر اخبار واشنگٹن پوسٹ کا کہنا ہے کہ ٹرمپ کے سبب اس سال سیاسی فساد2017 سے بھی زیادہ ہو سکتا ہے۔ مرکز میں بدنظمی کا ارتکاب وہ صدر کر رہے ہیں جو اپنے منصب کی اقدار توڑ رہے ہیں۔ سماء

CHINA

War on Terror

James Mattis

Coalition Support Fund

Tabool ads will show in this div