نیوائیرنائٹ پر کانسٹیبل کو کچلنے کا واقعہ، ملزمان کا جسمانی ریمانڈ منظور

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/01/Constable-Died-Case-lhr-Pkg-03-01.mp4"][/video]

لاہور: انسداد دہشت گردي عدالت نے کانسٹيبل کوکچلنے کے کيس ميں کارمالک مصطفيٰ اورڈرائيورسعيد کو سات روزہ جسماني ريمانڈ پر پوليس کے حوالے کرديا، سي سي پي او کہتے ہيں کيس ميں کسي کا کوئي دباو نہيں ۔

نيوائيرنائٹ کي مستيوں ميں کانسٹيبل کو کچلنے کے واقعہ میں کار کے مالک مصطفيٰ اور ڈرائيور سعيد کا سات روزہ جسماني ريمانڈ منظور کرلیا گیا ملزم طحہ کو شناخت پريڈ کے لئے جيل بھجواديا گيا۔

پوليس نے تين ملزمان کو انسداد دہشت گردي کي عدالت ميں پيش کيا، وکيل صفائي نے مقدمے ميں دہشت گردي کي دفعات شامل کرنے کي مخالفت کي ، جسے عدالت نے رد کرديا ۔

ملزمان کے وکيل نے کہا کہ ايک ايکسيڈنٹ ہے اس ميں انسداد دہشت گردي کي دفعات پتہ نہيں کيوں لگائي گئيں۔

سي سي پي اولاہورنے وضاحت کي کہ فوٹيج کي مدد سے ملزمان کي شناخت ميں تھوڑا وقت لگا، تفتيش ميں سستي نہيں دکھائي گئي، سي سي پي او لاہور کا کہنا تھا کہ ملزمان کا دانستہ اقدام ہے اس لئے دہشت گردي کي دفعات شامل کي گئيں

نيوائيرنائٹ کو پيش آنے والے اس واقعہ ميں کانسٹيبل مستنصرجاں بحق اور کانسٹيبل قاسم شديد زخمي ہوگئے تھے ۔

ACCUSED

new year night

Physical Remand

Tabool ads will show in this div