بھارت کا پاکستان سے مذاکرات کا عندیہ، حریت نمائندہ شریک نہ کرنے کی شرط

اسٹاف رپورٹ

نئی دہلی : يوم پاکستان کے موقع بھارت نے پاکستان سے مذاکرات کی بحالی کا عنديہ ديديا، ساتھ ہی يہ شرط بھی عائد کردی کہ ان مذاکرات ميں حريت کی کوئی نمائندگی نہيں ہوگی۔

بھارتی وزارت خارجہ کے مطابق پاکستان کے ساتھ براہ راست مذاکرات کيلئے تيار ہيں تاہم دوطرفہ مذاکرات حريت کی عدم شموليت سے مشروط ہيں۔

وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بيان ميں کہا گيا کہ حريت سے متعلق بھارت کی پوزيشن ميں کوئی تبديلی نہيں آئی، بھارت اپنی بات خود کرسکتا۔

ان کا کہنا ہے کہ دونوں ممالک کو اپنے معاملات شملہ اور لاہور معاہدے کی روشنی ميں حل کرنے چاہئیں جس ميں کسی تيسرے فريق کی شموليت قابل قبول نہيں ہوگی۔ سماء

کرنے

offers

turnout

holiday

Tabool ads will show in this div