نیپال میں قیامت خیز تباہی، 2 ہزارسے زائد افراد ہلاک

Nov 30, -0001

ویب ایڈیٹر:

کھٹمنڈو :نیپال میں قیامت خیز زلزلے اوراس کی تباہی سے ہلاکتوں کی تعداد 2 ہزار سے تجاوز کر چکی ہے،حکام کی جانب سے ہلاکتوں میں مزید اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔

نیپال کی 80 سالہ تاریخ میں سات اعشاریہ نو شدت کے بدترین زلزلے نے قیامت ڈھا دی۔

کوہ ہمالیہ کی گود میں واقع خوبصورت ملک نیپال  ہولناک گڑگڑاہٹ اور جھٹکوں سے موت کی وادی میں تبدیل ہوگیا، جہاں کچھ دیر پہلے زندگی کی رونق اور نظارے تھے وہاں زلزلے کے بعد ہر سو موت کی خاموشی چھا گئی۔

سر اٹھائے کھڑی تاریخی اور رہائشی عمارتیں اس طرح زمین بوس ہوئیں جیسے کبھی تھیں ہی نہیں،سڑکیں کھنڈرات کا منظر پیش کرنے لگیں۔ دہشت ناک منظر دیکھ کر ہر آنکھ اشکبار تھی۔

کھٹمنڈو ایئر پورٹ پرواز کے قابل نہ رہا اور مواصلاتی نظام ناکارہ ہو کر رہ گیا، لمحوں کے زلزلے سے برسوں کی تاریخ رقم ہوئی، زخمیوں کی چیخ و پکار اور ہر طرف بکھرے قیامت صغریٰ کے مناظر نے لوگوں کو خوف و دہشت میں مبتلا کردیا،  سیکڑوں لوگ جان سے گئے اور اس سے کہیں زیادہ لوگ ملبے تلے دب گئے۔ زلزلے سے دنیا کا بلند ترین پہاڑ ماؤنٹ ایورسٹ بھی لرز کر رہ گیا، ماؤنٹ ایورسٹ بیس کیمپ پر تودہ گرنے سے 18کوہ پیما ہلاک ہوگئے، جب کہ ایک ہزار سے زائد برف تلے دبے امداد کے منتظر ہیں۔

زلزلے کے جھٹکے پاکستان سمیت بنگلا دیش، بھارت اور چین کے علاقے تبت میں بھی محسوس کیے گئے، بھارت کے اتر پردیش، بہار اور مغربی بنگال میں 44، تبت میں 6 اور بنگلا دیش میں 2 ہلاکتوں کی اطلاع ہے۔

نیپال کے حکام نے عالمی برادری سے اس مشکل صورتحال میں تعاون کی بھرپور اپیل کی ہے۔ سماء

کی

Tabool ads will show in this div