برطانیہ انتخابات،ڈیویڈ کیمرون کی پارٹی پھر میدان مار گئی

اسٹاف رپورٹ


لندن : برطانيہ ميں تبديلي نہ آسکی مگر ڈيوڈ کيمرون کي کنزر ويٹو پارٹي پھر سے ميدان مارگئی، اس بار تنہا حکومت بنانے کي پوزيشن ميں ہے۔

کيمرون کي ٹوري پارٹي نے عام انتخابات ميں تين سو اکتيس نشستيں جيتيں جو گذشتہ انتخابات کي نسبت سات فيصد زيادہ ہے،ليبر پارٹي کو چھتيس سيٹوں کا خسارہ برداشت کرنا پڑا اس بار دارالعوام ميں ان کي تعداد دو سو بتيس ہوگي۔

اسکاٹش نيشنل پارٹي نئي طاقت بن کر ابھري، چھپن سيٹوں پر ہاتھ صاف کيا، لبرل ڈيموکريٹس بري طرح ناکام رہے، پچھلے انتخابات ميں چون سيٹيں جيتنے والي پارٹي اس بار صرف آٹھ سيٹيں ہي نکال سکي۔

شکست پر ليبر پارٹي کے سربراہ ملی بینڈ اور لبرل ڈيموکريٹس کے نیک کیلگ مستعفيٰ ہوگئے۔ شاندار فتح کے بعد ڈيوڈ کيمرون نے ملکہ برطانيہ سے ملاقات کي
اور نئي حکومت بنانے کا اعلان کيا، ڈيوڈ کيمرون نے اسکاٹ لينڈ اور آئرلينڈ کو اختيارات کي منتقلي کا وعدہ بھي دہرايا۔ سماء

کی

دسترخوان

dha

universities

Tabool ads will show in this div