بوسٹن دھماکوں میں ملوث نوجوان کو سزائے موت

ویب ایڈیٹر:


واشنگٹن: امریکی عدالت نے بوسٹن بم دھماکوں میں ملوث 21 سالہ نوجوان کو سزائے موت سنادی ۔

بوسٹن کی عدالت میں کیس کی سماعت15 گھنٹے جاری رہی جس کے بعد عدالت نے کرغزستان سے تعلق رکھنے والے نوجوان زوہر سارنیف کو سزائے موت سنا دی۔

زوہر سارنیف پر 2013میں ہونے والی میراتھن کے دوران بم دھماکوں اور فائرنگ کا الزام تھا، واقعے میں 5 افراد ہلاک اور 280 زخمی ہوئے تھے۔ سماء

policy

bombing

Tabool ads will show in this div