سندھ پولیس افسران کو اپنے ہی ساتھیوں پر اعتبار نہیں

کراچی : پوليس کو اپنے ہی پيٹی بند بھائيوں پر اعتبار نہيں، سينٹرل جيل کيس ميں گرفتار اہلکاروں نے تفتيش کسی اور محکمہ سے کرانے کی درخواست دے دی۔

سینٹرل جیل سے 2 دہشت گردوں کے فرار کے مقدمہ ميں پوليس انکوائری کیخلاف سندھ ہائی کورٹ ميں درخواستوں کی سماعت ہوئی، گرفتار جيل سپرنٹنڈنٹ نے مؤقف اپنايا کہ سی ٹی ڈی اور کرائم برانچ نے جانبدارانہ تحقیقات کيں۔

نامزد پوليس افسران نے عدالت کو بتايا کہ ذاتی رنجش کی بناء پر تفتيش کی جارہی ہے، تحقیقات دوسرے محکمے کے سپرد کی جائے، دہشگردوں سے کوئی تعلق نہیں مقدمہ ختم کیا جائے۔

سندھ ہائیکورٹ نے پولیس افسران کی درخواستوں کی سماعت 22 دسمبر کیلئے مقرر کردی۔ سماء

CENTRAL JAIL

SINDH HIGH COURT

police officers

Prisoners Escaped Case

Tabool ads will show in this div