نہتی فلسطینی لڑکی مسلح اسرائیلی فوجیوں کے سامنے ڈٹ گئی

Dec 20, 2017

[video width="180" height="320" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/12/Palestinian-Girl-Kidnapped-EQB.mp4"][/video]

غزہ : نوجوان فلسطینی لڑکی نے عزم و ہمت کی نئی مثال رقم کردی، اسرائیلی قابض فورسز نے اس کے بھائی کو شہید اور احتجاج کرنیوالی 17 سالہ عہد تمیمی کو گرفتار کرلیا، والدہ کو بھی حراست میں لے لیا گیا، سوشل میڈیا پر عہد کی رہائی کیلئے مہم شروع کردی گئی۔

بیت المقدس (یروشلم) کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے اور سفارتخانہ منتقل کرنے کے اعلان کے بعد اسرائیلی بربریت مزید تیز ہوگئی، صہیونی فوج کی فائرنگ اور حملوں میں 10 سے زائد فلسطینی شہید ہوچکے ہیں، جن میں بچے بھی شامل ہیں۔

فلسطینی علاقے نبی صالح میں جابر اور قابض اسرائیلی فوجیوں نے کمسن فلسطینی کو چہرے پر گولی مار کر شہید کردیا، احتجاج کرنیوالی 17 سالہ بہن عہد تمیمی کو گرفتار کرکے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا جبکہ اس کی والدہ کو صرف فوجیوں کو دیکھنے پر حراست میں لے لیا گیا۔

اپنے گھر پر چھاپے کے دوران نہتی فلسطینی لڑکی مسلح قابض افواج کے سامنے ڈٹ کر کھڑی ہوگئی تھی جبکہ صہیونیوں کو پیچھے ہٹنے پر بھی مجبور کردیا گیا، عہد تمیمی کی گرفتاری پر ہر سطح پر احتجاج کیا جارہا ہے جبکہ سوشل میڈیا پر اس کی رہائی کا مطالبہ ایک تحریک کی صورت اختیار کرتا جارہا ہے۔ سماء

US policy

@AhedALTamimi! #FreeAhedTamimi #FreeAhed #NoWayToTreatAChild

Ahd Tamimi

Tabool ads will show in this div