سال 2017 بھی لالی ووڈکےلیےسپرہٹ ثابت نہ ہوسکا

Dec 20, 2017
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/12/Films-in-2017-Lhr-Pkg-19-12.mp4"][/video]

لاہور: پاکستان فلم انڈسٹري طويل عرصے سے بحران کا شکار ہےاور حالات بدلنے کا نام ہي نہيں لے رہے۔سال دو ہزار سترہ ميں اٹھارہ پاکستاني فلميں ريليز ہوئيں جن ميں سے صرف تين  عوامي پزيرائي حاصل کر سکيں۔

رواں برس ريليز ہونے والي اٹھارہ پاکستاني فلميں بھي لالي ووڈ کي ڈگمگاتي کشتي کو سہارا دينے ميں ناکام رہيں ۔

مہر النسا وی لب یو، میں پنجاب نہیں جاؤں گی اور نامعلوم افراد2نے مداحوں کو سینما گھروں کا رخ کرنے پر مجبور کيا۔

فلم راستہ، یلغار، بلو ماہی، چلے تھے ساتھ، جیو سر اُٹھا کے، چین آئے نہ اور ورنہ جیسی فلمیں فلم بينوں کو ہٹ کرنے ميں ناکام رہيں اور ريليز کے ابتدائي دنوں ميں ہي ڈبے ميں بند ہوگئيں ۔

پندرہ فلميں  پٹنے کے باوجودارتھ ٹو اور چھپن چھپائي کے ہِٹ ہونے کی امید ختم نہیں ہوئی ۔

دوسري  طرف سینما مالکان نے ايک بار پھر دو ہزار اٹھارہ سے اميديں جوڑ لي ہيں۔ سماء

LOLLYWOOD

Tabool ads will show in this div