بھارتی سیکولرازم کاپردہ چاک،گائےذبح کرنےکےالزام پرنوجوان پربیہمانہ تشدد

اسٹاف رپورٹ


نئی دہلی : بھارتی سیکولرازم کا پردہ پھر چاک ہوگیا، ریاست اترپردیش میں انتہاپسند ہندووں نے گائے ذبح کرنے کا الزام لگا کر مسلم نوجوان کوسرعام تشدد کا نشانہ بنایا۔

 

بی جے پی کے راج میں مسلمان کا جینا محال ہوگیا، اٹھائیس جولائی کو اترپردیش کی ڈسٹرکٹ مضطفرنگر میں بجرنگ دل کے انتہا پسندوں نے ریاض نامی نوجوان کو گائے ذبیحہ کے الزام میں لہولہان کر دیا، ریاض کا کہنا ہے کہ وہ مویشیوں کیلئے چارہ خریدنے آیا تھا۔

 

ساری کارروائی کے بعد پولیس موقع پر پہنچی اور روایتی مسلم دشمنی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ریاض کو ہی حراست میں لے لیا، سارے واقعہ کی فوٹیج موقع پر موجود شخص نے انٹرنیٹ پراپ لوڈ کردی ہے۔ سماء

ALLEGATIONS

EXTREMIST

UP

UTTAR PARDESH

SECULAR

MUSLIM

Tabool ads will show in this div