ٹاپ امریکی ماڈل فلسطین کے حق میں روپڑی

Dec 08, 2017

لاس اینجلس:امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے یروشلم کو اسرائیل کا دارلحکومت تسلیم کرنے کے باضابطہ اعلان پر معرف امریکی ماڈل بیلا حدید نے شدید ردعمل ظاہر کردیا۔ بیلا کا کہنا ہے کہ فلسطینیوں کے درد کا سوچ کرمیں روپڑی۔

دوروز قبل مقبوضہ یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے اعلان کے بعد سے ڈونلڈ ٹرمپ کے اس فیصلے پرشدید ردعمل دیکھنے میں آرہا ہے۔عالم اسلام کے علاوہ دیگرممالک بھی اس اقدام کی سخت مذمت کررہے ہیں۔ ٹاپ امریکی ماڈل بیلا حدید نے بھی اپنے انسٹا گرام پیج پراس حوالے سے سخت ردعمل کا اظہارکیا ہے۔

بیلا حدید نے لکھا کہ میں یہ سب کہنے کے لیے بہترین الفاظ کے انتطار میں تھی، لیکن مجھے احساس ہوا کہ ان نانصافی کے بارے میں لکھنے کے لیے کوئی موزوں طریقہ نہیں۔ آج کا دن بہت بہت افسوسناک ہے۔ ٹرمپ کے اعلان کے بعد فلسطینیوں کے درد اورغم اور ان کی نسلوں کا سوچ کر میں رو پڑی۔

بیلا نے مزید لکھا کہ اپنے والد، کزنزاورفلسطینی خاندان جو ہمارے فلسطینی آباء واجداد کا درد رکھتے ہیں، میرے لیے یہ سب لکھنا اور مشکل بنا دیا۔ یروشلم تمام مذاہب کا گھر ہے لیکن اس بیان کے بعد ایسا محسوس ہورہا ہے جیسے ہم امن سے 5 قدم پیچھے چلے گئے ۔ فلسطینیوں کے ساتھ بہت ناروا سلوک ناقابل برداشت ہے۔ یہ ڈونلڈ ٹرمپ کا یک طرفہ فیصلہ ہےاور میں فلسطینیوں کے ساتھ کھڑی ہوں۔ بیلا نے اپنی پوسٹ میں یہ سوال بھی اٹھایا کہ امید کہاں ہے؟۔

واضح رہے کہ سال 2016 میں امریکا کی ٹاپ ماڈل آف دا ائر کااعزاز پانےوالی بیلا کے والد کا تعلق فلسطین سے ہے۔ سماء

Bella Hadid

top american model

President Trump's Decision

Tabool ads will show in this div