اعلیٰ عدلیہ کا دہشت گردی کے مقدمات کی روزانہ سماعت کا فیصلہ

اسٹاف رپورٹ

اسلام آباد : اعلیٰ عدلیہ نے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے خصوصی عدالتوں میں دہشت گردی مقدمات کی روزانہ سماعت کا فیصلہ کرلیا، سپریم کورٹ اور ہائیکورٹس ميں بھی دہشت گردی کے مقدمات کی علیحدہ سماعتیں ہونگی۔

اعلیٰ عدلیہ کے ججز کا اہم اجلاس ہوا، جس میں دہشت گردی کے مقدمات کی روزانہ سماعت کا فیصلہ کیا، صوبائی حکومتوں کو خصوصی عدالتیں محفوظ مقامات پر منتقل کرنے کی ہدایت کردی گئی۔

چیف جسٹس ناصر الملک کی زیرصدارت اجلاس میں پانچوں ہائیکورٹس کے چیف جسٹسز اور انسداد دہشتگردی عدالتوں کے نگران ججز نے شرکت کی۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ دہشت گردی کے مقدموں میں خصوصی عدالتوں کے جج، گواہوں اور تحقیقاتی و پراسیکیوشن ایجنسیوں کو مقررہ تاریخ دیں گے جس کے بعد روزانہ سماعت ہوگی۔

سپریم کورٹ سے جاری اعلامیہ کے مطابق اجلاس میں طے پایا کہ انسداد دہشت گردی مقدمات کے نگران ہائیکورٹ کے ججز ماہانہ اجلاس منعقد کریں گے، جس کی رپورٹ چیف جسٹس آف پاکستان کو بھجوائی جائے گی، تمام اعلیٰ عدالتوں میں بھی دہشتگردی کے مقدمات کی علیحدہ سماعت ہوگی۔

اجلاس نے صوبائی حکومتوں کو انسداد دہشت گردی عدالتیں محفوظ مقام پر منتقل کرنے کی ہدایت کردی، لاء اینڈ جسٹس کمیشن سے کہا گیا ہے کہ انسداد دہشت گردی قوانین کا جائزہ لیکر مقدمات جلد نمٹانے سے متعلق سفارشات متعلقہ حکومت کو ارسال کرے۔ سماء

فیصلہ

اعلیٰ

boys

cctv

Tabool ads will show in this div