زمینوں کی بندرباٹ نےسپریم کورٹ کوبرہم کردیا

کراچی: زمینوں کی بندر بانٹ پر سپریم کورٹ آج بھی برہم رہی۔جسٹس گلزار نے ريمارکس ديئے کہ سندھ حکومت کے افسران بے حس ہیں۔سرکاری مشينري تباہ ہوگئي۔کام نہيں ہوگا تو متبادل کے لئے فوج ہی نظر آئے گي۔

کراچی کی زمین لینڈ مافیا کے نرغے میں آگئی۔لیاری میں متروکہ وقف املاک کی عمارت پرقبضہ اورغیرقانونی تعمیرات پرسپريم کورٹ برہم نظر آئی۔عدالت ميں ایس بی سی اے حکام کوسرزنش کی گئی۔

جسٹس گلزارنے ريمارکس دئے کہ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی وجہ سے شہر کا نقشہ ہی بدل گیا ہے۔ایس بی سی اے پولیس کی مددمانگتی ہے اورپولیس رینجرز کی طرف دیکھتی ہے۔ادارےکام نہ کریں تومتبادل فوج ہی ہے۔کام نہیں ہوگاتوفوج ہی نظرآئےگی۔

جسٹس گلزار نے سندھ حکومت کے بھي کان کھينچے اورريمارکس دئے کہ ریاستی مشینری تباہ ہوگئی ہے۔افسران بے حس ہیں۔سرکاری نوکریوں کاحق ادا نہیں کررہے۔

ٹھیکیدارعبدالکریم کو کمرہ عدالت سے گرفتارکر لیا گیا۔عدالت نے حکم دياکہ ایک ماہ میں عمارت خالی کرائي جائے اور ٹھیکيدار سے رقم وصول کرکے مکینوں کو لوٹائي جائے۔ سماء

china cutting

Tabool ads will show in this div