دہشتگردی کےخاتمے کیلئےآرمی ایکٹ کو مضبوط کیا جائے ،عمران خان

ویب ایڈیٹر  :

 

اسلام آباد :  پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کاکہنا ہے کہ ساری قوم جانتی ہے کہ سیکورٹی خدشات ہیں،حکومت کومضبوط کرنےجارہےہیں تاکہ دہشتگردوں کیخلاف لڑسکے، عمران خان نے کہا کہ  دہشت گردی کے خاتمے کیلئے آرمی ایکٹ کومظبوط کردیا جائے تو آئین میں ترمیم کی ضرورت نہیں ہوگی۔

 

بنی گالہ سے وزیراعظم ہاؤس روانگی سے قبل میڈیا سے گفت گو میں عمران خان کا کہنا تھا کہ سانحہ پشاور کے بعد پوری قوم متحد ہے، ساری قوم جانتی ہےسیکیورٹی خدشات ہیں،اجلاس میں جانےکامقصدقوم کواکھٹاثابت کرناہے، ہم دشمن کو بتادیناچاہتےہیں کہ قوم متحدہے، تحریک انصاف آئین کی اندررہناچاہتی ہے، اور آئین کے انر رہتے ہوئے تمام فیصلوں کی حمایت کریں گے۔

 

عمران خان نے کہا کہ جوڈیشل کمیشن کابنانابہت ضروری ہے، جوڈیشل کمیشن بنےگاتودھاندلی معلوم ہوگی، اگروہ جوڈیشل کمیشن بناجوحکومت چاہتی ہےتوکوئی فائدہ نہیں، ایک سوال کے جواب میں عمران خان کا کہنا تھا کہ مذاکرات اور دھاندلی سے متعلق دونوں فریقین کے درمیان سخت اختلافات موجود ہیں لیکن ملک کی خاطراجلاس میں جارہےہیں، ہم حکومت کومضبوط کرنےجارہےہیں تاکہ دہشت گردوں کیخلاف لڑسکے۔

 

خصوصی عدالتوں کے قیام سے متعلق پوچھے گئے سوال کے جواب عمران خان کا کہنا تھا کہ  آئین کو چھیڑنے کی ضرورت اس طرح پیش نہیں آسکتی اگر آرمی ایکٹ کو مضبوط کردیا  جائے، پوری کوشش ہے کہ آرمی ایکٹ کے تحت نتائج حاصل کیے جائیں، قومی اتحادکےلیےحکومت کومضبوط کررہےہیں،2012 کےانتخابات کی تحقیقات نہیں ہوئیں توملک اندھیرےمیں چلاجائےگا، وزیراعظم سےبات کرونگاکہ اس ہی طرح آگےبڑھیں جیسےہم آگے بڑھے، بھارت نےہمارے جوانوں کوشہید کیا، بھارتی جارحیت  اور بارڈر کی خلاف ورزی پر بھارت سے واضح بات کی جائے۔ سماء

کی

کا

کو

jinnah

sargodha

promise

dams

Tabool ads will show in this div