پاکستان کا ایل او سی پر بھارتی جارحیت پر شدہد احتجاج

اسلام آباد: پاکستان نے چیری کوٹ اور نیزہ پیر سیکٹرز میں بھارتی فوج کی جانب سے ایل او سی پر بلااشتعال سیز فائر کی خلاف ورزی پر بھارت سے سخت احتجاج کرتے ہوئے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو جمعہ کو دفتر خارجہ طلب کرکے جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کی مذمت کی۔

گذشتہ روز چیری کوٹ سیکٹر میں بھارتی فائرنگ کے نتیجہ میں ٹروتی گاﺅں کی رہائشی رشیدہ بیگم اور نیزہ پیر کے رہائشی محمد حنیف نامی دو شہری شہید اور پانچ زخمی ہوئے۔ دفتر خارجہ کے ترجمان کے مطابق ڈائریکٹر جنرل (جنوبی ایشیاءو سارک) نے جمعہ کو بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر جے پی سنگھ کو طلب کرکے بھارتی فورسز کی جانب سے بلااشتعال فائرنگ پر احتجاجی مراسلہ ان کے حوالہ کیا۔

دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ ضبط و تحمل کے مطالبہ کے باوجود بھارت کی طرف سے جنگ بندی کی مسلسل خلاف ورزی کی جا رہی ہے۔ دفتر خارجہ نے کہا کہ بھارت نے رواں سال کنٹرول لائن اور ورکنگ باﺅنڈری پر 1300 مرتبہ جنگ بندی کی خلاف ورزی کی جس کے نتیجہ میں52 افراد شہید اور 170 زخمی ہوئے۔

ترجمان نے کہا کہ بےگناہ شہریوں کو جان بوجھ کر نشانہ بنانا ایک گھناﺅنا، انسانی وقار اور بین الاقوامی انسانی حقوق کے منافی اقدام ہے۔ بھارت پر زور دیا گیا کہ وہ معاہدہ کی پاسداری کرے اوراپنی فورسز کو سیز فائر معاہدہ کی پاسداری کا پابند بنائے۔ سماء

LINE OF CONTROL

JP SINGH

Tabool ads will show in this div