قومی اسمبلی : آئینی ترامیم پر ووٹنگ کل تک مؤخر

ویب ایڈیٹر

اسلام آباد : قومی اسمبلی میں دہشت گردی کیخلاف اقدامات سے متعلق ترامیم پر ووٹنگ کل تک مؤخر کردی گئی، اسپیکر کا کہنا ہے کہ کوشش ہے تمام جماعتوں کے تحفظات دور کئے جائیں، حکومت ترامیم کو متفقہ طور پر منظور کرانا چاہتی ہے، اجلاس کل صبح 10 بجے تک ملتوی کردیا گیا۔

پیپلزپارٹی کی درخواست اور مذہبی جماعتوں کی جانب سے تحفظات کے اظہار کے بعد قومی اسمبلی میں 21 ویں آئینی ترمیم اور آرمی ایکٹ 1954ء میں ترمیم کے بلوں پر ووٹنگ کل تک مؤخر کردی گئی، اسپیکر ایاز صادق کہتے ہیں کہ ترمیمی بل کی منظوری کیلئے کل ایوان میں ووٹنگ کرائی جائے گی، حکومت کی کوشش ہے تمام جماعتوں کے تحفظات دور کئے جائیں، حکومت ترمیمی بل کو متفقہ طور پر منظور کرانا چاہتی ہے۔

ذرائع کے مطابق کل قومی اسمبلی میں پرائیویٹ ممبرز ڈے ہے، تاہم ترمیمی بل پر ووٹنگ کیلئے معمول کی کارروائی معطل کرنے کی تحریک پیش کردی گئی ہے، قومی اسمبلی کا اجلاس کل صبح 10 بجے دوبارہ ہوگا۔

واضح رہے کہ پیپلزپارٹی نے ذوالفقار علی بھٹو کی برسی کے باعث ترامیم کے بل آج منظور نہ کرنے کی درخواست کی تھی۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) نے ترمیمی بل پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے مسودے سے لفظ فرقہ واریت اور مذہب کے لفظ نکالنے کا مطالبہ کیا تھا۔ سماء

steel

Tabool ads will show in this div