سینیٹ قائمہ کمیٹی کی پیٹرولیم پر اضافی سیلز ٹیکس کے خاتمے کی سفارش

اسٹاف رپورٹ

اسلام آباد : سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ نے پیٹرولیم مصنوعات پر لگائے گئے 5 فیصد اضافی سیلز ٹیکس کے خاتمے کی سفارش کردی، کمیٹی ارکان کہتے ہیں خسارے کا بوجھ عوام پر ڈالنا انصاف نہیں۔

نسرین جلیل کی زیرصدارت اجلاس میں کمیٹی نے کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات پر 5 فیصد اضافی سیلز ٹیکس لگانا قوم سے ناانصافی ہے، رکن عثمان سیف اللہ کا کہنا تھا کہ حکومتی فیصلہ کیخلاف سینیٹروں کو عدالت سے رجوع کرنا چاہئے۔

چیئرمین ایف بی آر نے بتایا کہ پیٹرولیم کی قیمتیں کم ہونے سے 70 ارب روپے کا نقصان ہوا ہے، کمیٹی نے کہا کہ حکومت نقصان کا بوجھ عوام پر ڈالنے کے بجائے اپنے اخراجات کم کرے، چیئرمین ایف بی آر نے کمیٹی کو بتایا کہ ہر سال ٹیکس دہندگان میں ایک لاکھ کا اضافہ ہورہا اور اس سال تعداد 9 لاکھ سے بڑھ گئی ہے۔

سینیٹر حاجی عدیل نے کہا کہ ٹیکس نظام کو آسان بنایا جائے، ہر پاکستانی کو لازمی ٹیکس گوشوارے جمع کرانے چاہیئں، چاہے وہ کچھ بھی ٹیکس نہ دیتا ہو، کمیٹی نے سفارش کی کہ صوبائی سطح پر بھی ٹیکس نمبرز جاری کئے جائیں۔ سماء

recipe

jundullah

سفارش

bail

ٹیکس

haider

Tabool ads will show in this div