دہشت گردی کیخلاف پاکستان اور ایران کا عزم

تہران : پاکستان اور ایران نے اپنی سرزمین کسی کیخلاف استعمال نہ ہونے دینے کا عزم ظاہر کردیا، ترجمان پاک فوج کا کہنا ہے کہ افغانستان میں داعش کی موجودگی خطے کیلئے خطرہ ہے، پاکستان میں دہشت گردوں کی کوئی پناہ گاہ نہیں، سرحد کو محفوظ بنانے کیلئے ہرممکن اقدامات کئے۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ ان دنوں تہران کے سرکارے دورے پر ہیں جہاں انہوں نے ایرانی سیاسی و عسکری قیادت سے ملاقاتیں کی، ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے ایرانی جنرل اسٹاف کے ہمراہ نیوز کانفرنس کرتے ہوئے واضح کیا کہ پاکستان اپنی سرزمین کسی کیخلاف استعمال نہیں ہونے دے گا، پاکستان میں دہشت گردوں کی کوئی پناہ گاہ نہیں، سرحد کو محفوظ بنانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کئے، پاکستان افغانستان میں امن کیلئے ہر اقدام کی حمایت کرتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ افغانستان میں داعش کی موجودگی خطے کیلئے خطرہ ہے، داعش کو ناکام بنانے کیلئے علاقائی تعاون ضروری ہے، پاکستان افغانستان میں امن کیلئے ہر اقدام کی حمایت کرتا ہے، پاک فوج کسی بھی خطرے سے نمٹنے کیلئے تیار ہے۔

آصف غفور نے مزید بتایا کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ایران کو دوستی اور تعاون کا پیغام دیا، پاک ایران سرحد کو امن اور دوستی سرحد قرار دیا، پاک ایران سرحد کی سیکیورٹی میں اضافہ باہمی مفاد میں ہے۔

وہ بولے کہ کشمیر پاکستان اور بھارت میں طویل عرصے سے حل طلب تنازع ہے، کشمیر کی حمایت پر ایرانی سپریم لیڈر کے بیان کا خیر مقدم کرتے ہیں، انہوں نے بتایا کہ ایران نے اپنی سرزمین بھی کسی کیخلاف استعمال نہ ہونے دینے کا عزم ظاہر کیا۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کا مزید کہنا ہے کہ جہاد کے اعلان کا حق صرف ریاست کو ہے، پاکستانی وفد مثبت احساسات اور مضبوط تعلقات کیساتھ ایران سے رخصت ہورہا ہے۔ سماء

DG ISPR

Daish

general qamar javed bajwa

Mejor General Asif Ghaffor

Tabool ads will show in this div