حریم فاروق سینسربورڈ کے خلاف بول پڑیں

لاہور: پنجاب سینسر بورڈ کی جانب سے فلم ’’نامعلوم افراد2‘‘ کی نمائش پر پابندی کو شوبز حلقوں کی جانب سے بھی تنقید کا نشانہ بنایا جا رہاہے۔ کامیاب نمائش کے 5 ہفتوں بعد اچانک فلم پر پابندی عائد کرنے کے خلاف اداکارہ حریم فاروق بھی بول پڑیں۔

حریم فاروق نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹڑ کا سہارا لیتے ہوئے کہا کہ ’’واقعی؟ پنجاب سینسر بورڈ نے فلم کی نمائش کے 5 ماہ بعد اس پر پابندی عائد کرنے کی منظوری دی ہے۔ یہ بہت نامناسب اور غلط ہے‘‘۔

اس سے قبل فلم کے مرکزی اداکار فہد مصطفیٰ نے بھی پابندی کے خلاف ٹوئٹرپر آواز اٹھائی تھی۔

عیدالاضحیٰ کے موقع پر ریلیز کی جانے والی بالی ووڈ فلم ’’نامعلوم افراد2‘‘ پر پابندی عائد کرنے کے لیے سینسربورڈ پنجاب نے گزشتہ روزنوٹیفکیشن جاری کیا تھا۔ نوٹیفکیشن کے مطابق فلم کی نمائش پرپابندین بیہودہ مناظر پراعتراضات کے باعث لگائی گئی ہے۔ فلم کیخلاف مسلسل شکایات آرہی تھیں۔

نامعلوم افراد 2 کی نمایاں کاسٹ میں فہد مصطفیٰ ،جاوید شیخ ،عروہ حسین، ہانیہ عامر، محسن عباس اورنیئراعجازشامل ہیں۔

دوسری جانب فلم کی پروڈیوسرفضاعلی میرزا نے کہا کہ پابندی سمجھ سے بالاتر ہے فیصلے کیخلاف عدالت جائیں گے۔ سرکاری لیٹر میں وجہ نہیں لکھی۔بلکہ شکایتوں کا ذکر ہے، ایسے لگتا ہے کہ یہ کہا جا رہا ہے فلم بنانا بند کر دیں۔

ہدایت کار نبیل قریشی کو بیرونی سازش نظر آنے لگی، کہتے ہیں شاید بیرون ملک سے فنڈنگ ہو رہی ہے، جب دیکھتے ہیں پاکستان کی انڈسٹری اپنی مدد آپ کے تحت کھڑی ہورہی ہے، نقصان پہنچانے آجاتے ہیں۔ سماء

PUNJAB

censor board

Fahad Mustafa

hareem farooq

Tabool ads will show in this div