چین سے خریدے گئے قراقرم ایگل پاک فضائیہ کے سپرد

اسٹاف رپورٹ:

کراچی : نگرانی کرنیوالا جدید طیارہ قراقرم ایگل پاکستان ایئرفورس کے حوالے کردیا گیا، وزیراعظم نواز شریف نے ملک سے دہشت گردی کے مکمل خاتمے اور خود مختاری کی حفاظت کا عزم ظاہر کیا ہے۔

چین سے خریدہ گیا قراقرم ایگل ایئربورن ارلی وارننگ طیارہ نہ صرف فضائی بلکہ سمندری حدود اور زمين پر ہونے والی نقل وحرکت کو مانيٹر کرتا ہے۔ اس ميں نصب انتہائی طاقت ور راڈار اہم ترين حصہ ہے، جو بہت دور سے ہی دشمن کی نقل و حرکت کوجانچ ليتا ہے۔

طیارے کی خصوصیات:

ايگل ايواکس سسٹم تيس ہزار فٹ کی بلندی سے ايک لاکھ بيس ہزار چار سو ساٹھ مربع ميل کا علاقہ کور کرسکتا ہے۔ طيارے ميں نصب جديد آلات دشمن کے مواصلاتي پيغام رسائی کو بھی مانيٹر کرسکتے ہيں۔ مسلسل حرکت ميں رہنے کی وجہ سے زمينی راڈار کے مقابلے ميں اسے ٹارگٹ کرنا بھی بہت مشکل ہے۔ ايواکس طيارے نہ صرف ملکی دفاع بلکہ دشمن پر حملے کيلئے بھی استعمال ہوتا ہے

وزیراعظم نواز شریف کا مسرور بیس کراچی آمد پر خیر مقدم کیا گیا، چاق و چوبند دستے نے سلامی دی، انہوں نے فضائی سرحدوں کی نگرانی کے حامل قراقرم ایگل ایئر بورن ارلی وارننگ طیارے کا معائنہ کیا۔ تقریب سے اپنے خطاب میں وزیراعظم نے  کہا کہ دہشت گردی کیخلاف پوری قوم متحد ہے اور یکسوئی کے ساتھ مسلح افواج کے ساتھ ہے، پاکستان خطے میں امن چاہتا ہے لیکن کسی بھی قیمت پر اپنی خودمختاری پر سمجھوتہ نہیں کرے گا۔ اس موقع پر ایئر چیف مارشل طاہر رفیق بٹ کا کہنا تھا کہ پاک فضائیہ کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کیا جائے گا، ملکی سرحدوں کا ہر قیمت پر تحفظ کرتے رہیں گے۔ سماء

پی

Murder

kunduz

حوالے

ایف

Tabool ads will show in this div