دھاندلی پر اسمبلیوں تحلیل ہونگی، ن لیگ، پی ٹی آئی مفاہمت، پی پی، بی این پی کی توثیق

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ

اسلام آباد : حکومت اور تحریک انصاف میں مفاہمت کی دستاویز سماء نے حاصل کرلی، انتخابات میں دھاندلی ثابت ہونے پر وزیراعظم قومی اور وزرائے اعلیٰ صوبائی اسمبلیاں تحلیل کرنے کے پابند ہوں گے، پیپلز پارٹی اور بی این پی نے بھی توثیق کیلئے دستخط کردیئے۔

سماء کو حاصل ہونیوالی دستاویزات کے مطابق دھاندلی کی تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمیشن بنانے کیلئے جاری ہونیوالے مجوزہ صدارتی آرڈیننس کا مسودہ بھی یادداشت کا حصہ بنایا گیا ہے، کمیشن نے الیکشن میں بے قاعدگیوں کی تصدیق کی تو وزیراعظم قومی اسمبلی توڑنے کے پابند ہوں گے، اس کے بعد وزرائے اعلیٰ صوبائی اسمبلیاں تحلیل کریں گے۔

دھاندلی کی تحقیقات کیلئے عدالتی کمیشن الیکشن انکوائری آرڈیننس 2013ء کے تحت قائم ہوگا، کمیشن ضرورت کے مطابق ایک یا ایک سے زیادہ تحقیقاتی ٹیمیں تشکیل دے سکے گا، کمیشن کی تحقیقات کے دوران نادرا، ایف آئی اے کے سربراہان اور سیکریٹری الیکشن کمیشن پر تحریک انصاف کا اطمینان ضروری ہوگا، تحریک انصاف ان افسروں سے مطمئن نہ ہوئی تو انہیں تبدیل کردیا جائے گا۔

پیپلز پارٹی اور بی این پی نے بھی ایم او یو کی توثیق کیلئے دستخط کئے ہیں، دھاندلی ثابت ہونے پر دونوں جماعتیں بالترتیب سندھ اور بلوچستان اسمبلیاں توڑنے کی پابند ہوں گی، معاہدے کے مطابق نئی نگراں حکومتیں تحریک انصاف سمیت تمام اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے بنیں گی۔ سماء

فٹبال

پی

بی

assault

queen elizabeth

Tabool ads will show in this div