پاک فوج کو یمن کے اندر نہیں بھیجا جائیگا،ذرائع وزارت دفاع

ویب ایڈیٹر:


اسلام آباد   :   وزارت دفاع کے ذرائع کے مطابق سعودی حکام نے پاکستان سے انٹیلی جنس اور انسداد دہشت گردی سے متعلق مدد مانگی ہے، ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ پاکستانی فوج کو یمن کے اندر لڑائی کیلئے نہیں بھیجا جائے گا۔

پاکستان کا اعلیٰ سطح کا وفد سعودی عرب کا دورہ مکمل کر کے وطن واپس روانہ ہوگیا۔ وفد نے اپنے دورے کے دوران سعودی وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان السعود سے تفصیلی ملاقات کی۔ وفد میں وزیر دفاع خواجہ محمد آصف، مشیر خارجہ سرتاج عزیز اور دیگر اعلیٰ فوجی حکام شامل ہیں۔ وفد سے متعلق وزارت دفاع کے ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان کی جانب سے سعودی حکام کو بتا دیا گیا ہے کہ پاک فوج کو یمنی سرحد کے اندر نہیں بھیجا جائے گا۔ سعودی حکام کی جانب سے پاکستانی وفد کو دی جانے والی بریفنگ میں بتایا گیا ہے  کہ سعودیہ عرب کی داخلی سلامتی کو خطرات لاحق ہیں۔

بریفنگ میں سعودی حکام کا مزید کہنا تھا کہ حرمین شریفین کے تحفظ کیلئے مدد درکار ہے، سعودی حکام کی جانب سے پاکستان سے انسداد دہشت گردی اور انٹیلی جنس مدد مانگی گئی ہے۔

دوسری طرف ترجمان دفتر خارجہ تسنیم اسلم نے سعودی عرب کی جانب سے پاکستان سے فوج مانگنے کے مطالبے سے اظہار لاعملی کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں ابھی تک ملاقاتوں کی تفصیل سے آگاہ نہیں کیا گیا۔ سماء

کے

Army Public School

law

tigers

پاک فوج

Tabool ads will show in this div