کراچی : بورڈ آفس چورنگی پر 3 غیر قانونی ریسٹورنٹس سیل

اسٹاف رپورٹ

کراچی : کراچی کے علاقے نارتھ ناظم آباد میں گرین بیلٹ پر قائم 3 نجی ریسٹورنٹس کی شامت آگئی، انتظامیہ نے وزیر بلدیات سندھ شرجیل میمن کی ہدایت پر مشہور ریسٹورنٹس کو تالے ڈال دیئے۔

کراچی کو تجاوزات سے پاک کرنے کا جنون، وزیر بلدیات سندھ شرجیل میمن پھر ایکشن میں آگئے، پہلے گلشن اقبال میں گرین بیلٹ پر قائم شادی ہال کی شامت آئی پھر نارتھ ناظم آباد میں میٹرک بورڈ آفس کے سامنے گرین بیلٹ پر قائم ریسٹورنٹس کا نمبر آیا، 3 نامی گرامی ریسٹورنٹس کو تالا ڈالنے کا حکم دے دیا۔

وزیر بلدیات کے حکم کی تعمیل میں انتظامیہ نے ریسٹورنٹس سیل کردیئے، گرین بیلٹ پر ہوٹلوں کی تعمیر پر وزیر بلدیات نے میونسپل کمشنر ضلع وسطی کمال مصطفیٰ کو معطل کردیا۔

ایک بیان میں شرجیل میمن نے ان تجاوزات کو سابق ٹاؤن ناظم ممتاز حمید کا کارنامہ قرار دیا، جن کی جانب سے ان ریسٹورنٹس کو 5 سالہ لیز جاری کی گئی تھی، 2013ء میں لیز ختم ہونے کے بعد اس وقت کے ایڈمنسٹریٹر ضلع وسطی لطیف لودھی اور سیکشن آفیسر نیو کراچی ٹاؤن شمعون صدف نے لیز میں غیرقانونی توسیع کی۔

لیز میں توسیع پر شمعون صدف کو عہدے سے معطل کردیا گیا جبکہ لطیف لودھی کا مقدمہ محکمہ اينٹی کرپشن کو بھجوانے کا اعلان بھی کيا، ذرائع کا کہنا ہے کہ سیل کئے گئے ریسٹورنٹس کو جلد ہی مسمار کردیا جائے گا۔ سماء

burger

سیل

refugees

father

lab

peak

Tabool ads will show in this div