پاکستان افغانستان سے وسیع البنیاد باہمی مفاد پر مبنی تعلقات پر یقین رکھتا ہے

اسلام آباد: وزیر مملکت برائے اطلاعات، نشریات و قومی ورثہ مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ پاکستان افغانستان سے وسیع البنیاد باہمی مفاد پر مبنی تعلقات پر یقین رکھتا ہے، انتہاء پسندی اور مذہبی شدت پسندی دونوں ملکوں کے مشترکہ دشمن ہیں، پاکستان پرامن ہمسائیگی کی پالیسی سے مشترکہ اہداف کے حصول پر یقین رکھتا ہے، میڈیا ہمارے عظیم ثقافتی ورثہ پر مشتمل امن و محبت کے پیغام کو پھیلانے کے مواقع فراہم کرے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کو افغان میڈیا کے وفد سے ملاقات کے دوران کیا۔ وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب انہوں نے کہا کہ امن کیلئے کوششوں کی کامیابی کو یقینی بنانے کیلئے پاکستان اور افغانستان کی حکومت اور عوام کو قریب لانے کےلئے افغان میڈیا کردار ادا کرے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان افغانستان سے بہتر تعلقات کو بہت اہمیت دیتا ہے کیونکہ پاکستان اور افغانستان مشترکہ تاریخ، ثقافت اور مذہب کے تعلق میں جڑے ہوئے ہیں۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ دونوں ملک مل کر عوام کےلئے خطہ میں امن، استحکام اور خوشحالی کےلئے کام کریں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان افغانستان سے وسیع البنیاد باہمی مفاد پر مبنی تعلقات پر یقین رکھتا ہے اور افغانستان میں امن کی بحالی ہر ممکن اقدامات کےلئے تیار ہے کیونکہ پرامن افغانستان پاکستان کے مفاد میں ہے۔

وزیر مملکت نے کہا کہ پاکستان پرامن ہمسائیگی کی پالیسی پر عمل پیرا ہے تاکہ غربت خاتمہ اور اپنے شہریوں کیلئے ترقی کے نئے دور کے آغاز کے مشترکہ اہداف کے حصول کو یقینی بنایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی اور مذہبی انتہاء پسندی پاکستان اور افغانستان کے مشترکہ دشمن ہیں ان کے خلاف جنگ میں دونوں ممالک نے بھاری مالی اور جانی نقصان اٹھایا ہے۔

وزیر مملکت نے میڈیا پر زور دیا کہ وہ دونوں ممالک کے عوام کے درمیان غلط فہمیوں پیدا کرنے والی آوازوں کو اہمیت نہ دیں ایسے عناصر کے بجائے میڈیا ہمارے عظیم ثقافتی ورثہ پر مشتمل امن و محبت کے پیغام کو پھیلانے کے مواقع فراہم کرے۔

افغان میڈیا کے و فد نے پرتپاک خیرمقدم پر وزیر مملکت کا شکریہ ادا کیا اور دونوں ممالک کے درمیان اچھے تعلقات کے فروغ میں مدد دینے کے عزم کا اعادہ کیا۔ وزیر مملکت نے کہا کہ حکومت پاکستان دونوں ممالک کے میڈیا کے درمیان بامقصد روابط میں سہولت کیلئے تمام ضروری سہولیات فراہم کرے گی تاکہ معلومات پر مبنی آراء کے ذریعے بڑی مفاہمت پیدا کی جا سکے۔

ملاقات کے دوران ڈائریکٹر جنرل ایکسٹرنل پبلسٹی ونگ شفقت جلیل اور وزارت اطلاعات و نشریات کے اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔ اے پی پی

INFORMATION MINISTER

Tabool ads will show in this div