پی ٹی آئی کا246 پرضمنی انتخابات میں آرمی کی تعیناتی کامطالبہ

ویب ایڈیٹر:


کراچی   :   پاکستان تحریک انصاف کے رہنما عمران اسماعیل کا کہنا ہے کہ کیمپ پر حملہ کرنے والوں کو نائن زیرو میں ہار پہنائے گئے، الیکشن کمیشن ان چیزوں کا نوٹس کب لے گا، انہوں نے انتظامیہ اور حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ این اے 246 کے ضمنی انتخاب کے دوران فوج کو تعینات کیا جائے۔

کراچی میں پارٹی قیادت اور کارکنوں کے ہمراہ کریس کانفرنس سے خطاب میں پی ٹی آئی رہنما عمران اسماعیل کا کہنا تھا کہ آج ہونے والے اجلاس میں الیکشن کمیشن کا کوئی نمائندہ نہیں تھا، ہر بار کوشش کی جاتی ہے متحدہ سے دوستی کرالی جائے، پی ٹی آئی کارکنان پر حملے ہو رہے ہیں، ہمارے کارکن علاقوں میں نہیں جا پارہے، گھر گھر جا کر لوگوں سے رابطہ نہیں کر پا رہے۔

انہوں نے کہا کہ چھچھورے ہتھکنڈوں سے پیچھے نہیں ہٹیں گے، کیمپ پر حملہ کرنے والوں کو نائن زیرو پر ہار پہنائے گئے، الیکشن کمیشن ان چیزوں کا کب نوٹس لے گا، 23اپریل تک حلقے میں فوج تعینات کی جائے، اپنے اوپر ہونے والے حملے نہیں رکوا سکتے، ایک جگہ روکو گے تو دوسری جگہ جاؤں گا۔

انہوں اٹل لہجے میں اعلان کرتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی کراچی کو خوف سے آزاد کرا کررہے گی، کسی کا روایتی حلقہ ہے تو کیا دوسرا الیکشن نہیں لڑے؟ وزیراعلیٰ سندھ کہتے ہیں حلقہ ایم کیو ایم کا ہے، ضابطہ اخلاق کو اگلے ہی دن ایم کیو ایم نے پامال کیا، حملوں سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ زندگی موت اللہ کے ہاتھ میں ہے، میرے والدین نے دہلی سے ہجرت کی، میرے دادا نے قیام پاکستان کیلئے جیل کاٹی، میں مہاجر ہوں اور اردو اسپیکنگ ہوں مگر تشدد پر یقین نہیں رکھتا۔

اس موقع پر عارف علوی کا کہنا تھا کہ ہمیں انتظامیہ پر بھروسہ نہیں، ایم کیو ایم نہیں چاہتی کہ پُرامن انتخاب ہوں، فوج آئے اس سے قبل کے لاشیں گر جائیں۔ سماء

میں

کی

آرمی

flee

Tabool ads will show in this div